امریکہ نے بولیویا کی سینیٹر جینین اینیز کو عبوری صدر تسلیم کر لیا

واشنگٹن : امریکہ نے بولیویا کے صدر ایوو موریلز کے مستعفی ہونے کے بعد خود کو صدر قرار دینے والی اپوزیشن جماعت کی خاتون سینیٹر جینین اینیز کو عبوری صدر تسلیم کر لیا ہے۔ امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے گزشتہ روز اپنے ایک بیان میں سینیٹر جینین اینیز کے خود کو بولیویا کی عبوری صدر قرار دینے اور بولیویا کے آئین کے تحت ملک کو جمہوری طریقے سے چلانے کے بیان کو سراہتے ہوئے کہا کہ بولیویا کے جلد از جلد شفاف اور آزادانہ انتخابات کرانے کی تیاریوں کے پیش نظر امریکہ کو بولیویا کے ساتھ کام کرنے کا انتظار ہے۔
انہوں نے مستعفی ہونے والے صدر ایوو مورالز کے حمایتیوں اور مخالفین کے مابین کشیدگی کے باعث تشدد کو روکنے پر بھی زور دیا۔ واضح رہے کہ 20 اکتوبر کوہونے والے بولیویا کے متنازعہ انتخابات میں ایوو مورالز کے چوتھی مدت کے لئے صدر منتخب ہونے پر کئی ہفتے تک کشیدگی جاری رہی۔ بعدازاں مورالز اپنے عہدے سے مستعفی ہو گئے تھے،بولیویا کی سینیٹ کی ڈپٹی سپیکر جینین اینیز نے منگل کو خود کو ملک کا عبوری صدر قرار دیتے ہوئے جلد از جلد نئے انتخابات کرانے کا اعلان کیا ہے۔

تاریخ اشاعت : جمعرات 14 نومبر 2019

Share On Whatsapp