ایک سرکاری لاء آفیسرنے کہا کہ نوازشریف مرتا تو مرجائے، خواجہ آصف

میں ان لوگوں کے نام بھی بتا سکتا ہوں، جس نے کہا کہ نوازشریف مرتا ہے تو مرجائے، اس شخص نے کہا جو میرا مئوقف ہے وہی ریاست کا ہے۔ مرکزی رہنماء ن لیگ خواجہ آصف کی گفتگو

لاہور : مسلم لیگ ن کے مرکزی رہنماء خواجہ آصف نے کہا ہے کہ ایک سرکاری لاء آفیسرنے کہا کہ نوازشریف مرتا تو مرجائے، میں ان لوگوں کے نام بھی بتا سکتا ہوں، جس نے کہا کہ نوازشریف مرتا ہے تو مرجائے، جو میرا مئوقف ہے وہی ریاست کا مئوقف ہے کہ نوازشریف بے شک مر جائے۔ انہوں نے نجی ٹی وی کے پروگرام میں تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ بھلا شہبازشریف کا وزیر اعظم پر کیا اثرورسوخ ہوسکتا ہے؟ چند روز پہلے ایک میٹنگ میں نیازی صاحب نے وہاں لوگوں کو کہا کہ چیک کرو، میاں نوازشریف کے خون کے سیمپل کہیں تبدیل تو نہیں کردیے جاتے؟ کہیں یہ فراڈ تو نہیں ہورہاکہ اس طرح کی رپورٹس بنائی جا رہی ہیں؟ یہ بات نیازی صاحب نے 15، 20 لوگوں کی موجودگی میں کی ہے۔
خواجہ آصف نے کہا کہ میں حکومت کا رویہ بتاتا ہوں جب میاں نوازشریف کی ضمانت لگی، اس روز ایک لاء افسر کو فون کیا گیا کہ ہم اس کو سننا چاہتے ہیں، آپ کا نوازشریف کی ضمانت سے متعلق کیا مئوقف ہوگا؟ اس نے کہا کہ ہمارا کیا مئوقف ہوگا، ہماری طرف سے بے شک مرجائے۔اس شخص نے پوچھا میں آپ کا مئوقف نہیں ریاست کا مئوقف پوچھ رہا ہوں جس کے آپ لاء افسر ہیں۔
اس نے کہا کہ جو میرا مئوقف ہے وہی ریاست کا مئوقف ہے کہ نوازشریف بے شک مر جائے۔میں ان لوگوں کے نام بھی بتا سکتا ہوں، جس نے کہا کہ نوازشریف مرتا ہے تو مرجائے۔انہوں نے اینکر شاہزیب خانزادہ نے سے کہا کہ میں اس شخص کا نام آپ کو آف دی ریکارڈ ضرور بتا سکتا ہوں۔ انہو ں نے کہا کہ نیازی صاحب اور حکومتی لوگوں کی کیا سوچ ہے یہ میں نے بتا دی ہے ۔ جب کہ اسٹیبلشمنٹ میں بھی کچھ قابل لوگ بیٹھے ہوئے ہیں ، جنہوں نے سیاسی معاشی عدم استحکام اور دوسرے معاملات پر ان کو مشورہ ضروردیا ہوگا۔

تاریخ اشاعت : ہفتہ 9 نومبر 2019

Share On Whatsapp