وزیراعلیٰ سردار عثمان بزدار کی زیرصدارت اجلاس، زراعت کی ترقی اور کاشتکاروں کو سہولتیں فراہم کرنے کیلئے اقدامات کا جائزہ لیا گیا

, ٹڈی دل کے حملے سے فصلو ںکو بچانے کیلئے اقدامات پر غور ، زرعی گریجویٹس کیلئے انٹرن شپ پروگرام شروع کرنیکا فیصلہ پنجاب میں فلوری کلچر کے فروغ کیلئی40کروڑ روپے سے نیاپروگرام شروع کیاجائیگا،،عثمان بزدار

لاہور۔8 نومبر : وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کی زیرصدارت وزیراعلیٰ آفس میں اعلیٰ سطح کا اجلاس منعقد ہوا ،جس میں شعبہ زراعت کی ترقی اور کاشتکاروں کو سہولتیں فراہم کرنے کیلئے اقدامات کا جائزہ لیا گیا۔ اجلاس میں ٹڈی دل کے حملے سے فصلو ںکو بچانے کے حوالے سے اقدامات پر بھی غور کیا گیا۔اجلاس میں زرعی گریجویٹس کیلئے انٹرن شپ پروگرام شروع کرنے کا فیصلہ کیاگیا۔
وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا کہ 20کروڑروپے کی لاگت سے 130 زرعی گریجویٹس کو تربیت دی جائے گی اوریہ پروگرام ہر سال جاری رہے گاجبکہ پنجاب میں فلوری کلچر کے فروغ کیلئے نیا پروگرام شروع کیاجائے گااوراس پروگرام پر تقریباً 40کروڑ روپے خرچ کیے جائیںگے۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ کاشتکاروں کو زیادہ سے زیادہ سہولتیں دیںگے۔ پنجاب زرعی صوبہ ہے ،زراعت کی ترقی سے معیشت مضبوط ہوگی۔
کاشتکاروں کے حقوق کا تحفظ پہلے بھی کیا ہے آئندہ بھی کریں گے ۔ ہماری حکومت نے گندم اورگنے کے کاشتکاروں کو ان کی محنت کا پورا معاوضہ دیاہی-آئندہ سیزن میں بھی گنے کے کاشتکاروں کو ان کی محنت کا پورا ثمر دیں گی- وزیراعلیٰ نے بہاولپور، رحیم یار خان اور بہاولنگر کے علاقوںکی 24 گھنٹے مانیٹرنگ کا حکم دیتے ہوئے کہا کہ فصلوں کو ٹڈی دل سے بچانے کیلئے تمام ضروری اقدامات اور وسائل بروئے کار لائے جائیں۔
ٹڈی دل کے مکمل خاتمے تک سپرے جاری رکھا جائے۔ وزیراعلیٰ نے ٹڈی دل کو کنٹرول کرنے کیلئے روزانہ کی بنیاد پر موثر سرویلنس جاری رکھنے کی ہدایت دیتے ہوئے کہا کہ مستقبل میں ٹڈی دل کے حملے سے فصلوں کو بچانے کیلئے جامع منصوبہ بندی کی جائے اوراس ضمن میں وفاقی حکومت کے متعلقہ اداروں سے بھی رابطہ کیا جائے ۔انہوںنے کہا کہ فصلوں کی کاشت کے حوالے سے موسمیاتی تغیرات کو مدنظررکھنا ضروری ہے ۔
وزیراعلیٰ نے اس ضمن میں ادارہ جاتی میکانزم تشکیل دینے کی ہدایت کی اور کہا کہ زرعی شعبہ کی ترقی کیلئے ریسرچ پر خصوصی توجہ مرکوز کی جائے اور زرعی ریسرچ اداروں کی استعداد کار میں اضافہ کرنے کیلئے جامع اقدامات کیے جائیں ۔وزیراعلیٰ کو بریفنگ میں بتایا گیا کہ رحیم یار خان اوربہاولپور میں تین ،تین کیمپس قائم کردیئے گئے ہیں جبکہ 16سرویلنس ٹیمیںٹڈی دل کے خاتمے کیلئے فیلڈ میں موجو د ہیں۔
صوبائی وزراء راجہ بشارت، نعمان لنگڑیال، چیف سیکرٹری، چیئرمین منصوبہ بندی و ترقیات، پرنسپل سیکرٹری وزیراعلیٰ، سیکرٹریز زراعت، خزانہ، اطلاعات، چیئرمین ٹاسک فورس برائے فرٹیلائزرز ، سپیشل سیکرٹری زراعت مارکیٹنگ، ڈی جی ایوب ایگریکلچر انسٹی ٹیوٹ فیصل آباد اور سپیشل مانیٹرنگ یونٹ کے سربراہ نے اجلاس میں شرکت کی۔

تاریخ اشاعت : جمعہ 8 نومبر 2019

Share On Whatsapp