امید ہے مولانا فضل الرحمان مذاکرات کریں گے بھاگیں گے نہیں: وزیر دفاع کا مذاکراتی کمیٹی کا سربراہ بننے کے بعد بیان

وزیرِ دفاع کے بیان سے مذاکرات کی بجائے دوریاں بڑھنے کا خطرہ

لاہور : وزیراعظم عمران خان کی جانب سے بنائی مولانا فضل الرحمان کے ساتھ مزاکرات کرنے کیلیے بنائی جانے والی کمیٹی کے سربراہ وزیر دفاع پرویز خٹک نے کہا ہے کہ امید ہے مولانا فضل الرحمان مذاکرات کریں گے بھاگیں گے نہیں۔ انہوں نے کہا کہ حزب اختلاف کی سب جماعتوں کو دعوت دے رہے ہیں کہ وہ ہم سے ملاقات کریں اور اپنے مسائل سے آگاہ کریں، ابھی تک کسی رہنما سے ملاقات نہیں ہوئی ہے لیکن ہمیں امید ہے اچھا نتیجہ نکلے گا۔
انہوں نے کہا کہ ملک کے حالات خراب کرنے والوں کے پیچھے جو ہاتھ ہیں ہماری کوشش ہے کہ ان ہاتھوں کو کامیاب ہونے سے روکیں اور ہم ملک کے حالات کو خراب ہونے نہیں دیں گے۔ پرویز خٹک نے کہا کہ ہماری کمیٹی حزب اختلاف کی کمیٹی سے ایجنڈے پر بات کریں گے لیکن ابھی تک مولانا فضل الرحمان کی جانب سے آزادی مارچ کا ایجنڈا سامنے نہیں آیا۔وزیر دفاع نے کہا کہ ہمیں امید ہے مولانا فضل الرحمان ہم سے ضرور بات کریں گے اور بھاگیں گے نہیں، امید ہے درمیان کا کوئی راستہ نکل آئے گا اور آزادی مارچ کو روکنے میں کامیاب ہو جائیں گے۔
انہوں نے مزید کہا کہ مولانا فضل الرحمان سے میرا کوئی ذاتی اختلاف نہیں ہے،دھرنے کے پیچھے کوئی ملک دشمن ایجنڈا نظر نہیں آرہا، سب پاکستانی ہیں،دوچاردنوں میں اپوزیشن رہنماؤں سے ملاقاتیں شروع ہوجائیں گی، دھرنا ڈی چوک پہنچنے سے پہلے معاملہ حل کریں گے۔انہوں نے نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کل کورکمیٹی کے اجلاس میں فیصلہ ہوا تھا ہم نے ساری جماعتوں سے بات کرنی ہے۔ ن لیگ ، پیپلزپارٹی اور جے یوآئی ف سے بات کریں گے۔ان سے کہیں گے اپنا ایجنڈا بتائیں ۔کشمیر ایشو، معاشی اور دوسرے حالات میں بات چیت ہونی چاہیے۔کیونکہ دنیا میں کچھ ایسی قوتیں ہیں جن میں ہمارے ہمسایہ دشمن بھی ہے، وہ چاہتے ہیں پاکستان میں حالات خراب ہوجائیں۔

تاریخ اشاعت : جمعرات 17 اکتوبر 2019

Share On Whatsapp