نیشنل گیمز سائیکلنگ ایونٹ تین دنوں میں مکمل کیا جائے گا، نثار احمد

پشاور : رواں مہینے پشاور میں ہونے والی 33 ویں نیشنل گیمز کا سائیکلنگ ایونٹ 28 تا 30 اکتوبر تک تین دنوں میں مکمل کیا جائے گا ہر ایونٹ کے اختتام پر کھلاڑیوں میں انعامات تقسیم کئے جائیں گے مرد وخواتین ٹیموں کو مجموعی طور نو نو میڈلز دیئے جائیں گے، اب تک چاروں صوبوں، آرمی، ریلوے اور واپڈا نے ایونٹ میں شرکت کی تصدیق کر دی ہے اگر مزید محکمے آنا چاہیں تو انہیں بھی ایونٹ میں شامل کرایا جائے گا۔
نیشنل گیمز سائیکلنگ ایونٹ کے آرگنائزنگ سیکرٹری نثار احمد، خیبر پختونخوا کیمپ کے کمانڈر فیاض احمد، ممبر آرگنائزنگ کمیٹی ناصر مہمند اور ٹیکنیکل آفیشلز طارق نے مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ 28 اکتوبر کو ایونٹ کا آغاز 42 کلومیٹر پر مشتمل خواتین انفرادی ٹائم ٹرائل سے ہوگا جس کے بعد مردوں کا انفرادی ایونٹ کرایا جائے گا پھر مرد وخواتین ٹیم ٹرائلز ریس ہوگی جس میں ہر ٹیم کے چھ چھ سائیکلسٹس حصہ لیںگے، خواتین روڈ سائیکلنگ ریس 42 اور مردوں کی ریس 98 کلومیٹر پر مشتمل ہوگی جس میں ہر ٹیم کے آٹھ آٹھ کھلاڑی حصہ لے سکیں گے۔
مختلف سوالوں کے جواب میں انہوں نے کہا کہ 26 اکتوبر کو منیجرز کا اجلاس ہوگا جس میں سب کو ایونٹ کے شیڈول اور طریقہ کار سے آگاہ کیا جائے گا اگر کسی کو لائسنس نہیں ملا ہو تو اسے لائسنس بھی جاری کیا جائے گا، ایونٹ میں ملک بھر سے ٹاپ سائیکلسٹس حصہ لیں گے۔ خیبر پختونخوا کی تیاریوں کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ تربیتی کیمپ جاری ہے مرد وخواتین ٹیموں کے لئے آٹھ آٹھ کھلاڑیوں کا انتخاب کرلیا گیا ہے دو دو کھلاڑی سٹینڈ بائے ہوں گے اس بار صوبے کا ایونٹ جیتنے کے امکانات زیادہ ہیں۔
انہوں نے کہا کہ ڈائریکٹورف آف سپورٹس خیبر پختونخوا نے ڈیمانڈ کے مطابق عالمی معیار کا سامان فراہم کیا ہے، گیمز کے پشاور میں انعقاد پر صوبائی حکومت، وزیر کھیل محمد عاطف خان اور اولمپک ایسوسی ایشن کے صدر سید عاقل شاہ مبارکباد کے مستحق ہیں۔

تاریخ اشاعت : جمعرات 10 اکتوبر 2019

Share On Whatsapp