جے یو آئی ف کا 27 اکتوبر کا اسلام آباد میں داخل نہ ہونے کا فیصلہ

مولانا فضل الرحمان نے کارکنان کو 31 اکتوبر سے قبل کسی صورت وفاقی دارالحکومت میں داخل نہ ہونے کی تلقین کر دی

اسلام آباد : جے یو آئی ف کا 27 اکتوبر کا اسلام آباد میں داخل نہ ہونے کا فیصلہ، مولانا فضل الرحمان نے کارکنان کو 31 اکتوبر سے قبل کسی صورت وفاقی دارالحکومت میں داخل نہ ہونے کی تلقین کر دی۔ تفصیلات کے مطابق جمعیت علمائے اسلام ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کارکنان کو پرامن طور پر 27 اکتوبر کو اسلام آباد کا رخ کرنے کی ہدایت کردی۔ تاہم کارکنان کو ہدایت کی گئی ہے کہ 31 اکتوبر سے قبل اسلام آباد میں داخل نہ ہوں۔
جے یو آئی ف کی قیادت نے فیصلہ کیا ہے کہ وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں 31 اکتوبر کو داخل ہوا جائے گا۔ اس حوالے سے جماعت کے تمام کارکنان کو نئی حکمت عملی سے متعلق آگاہ کرتے ہوئے باقاعدہ ہدایات بھی جاری کر دی گئی ہیں۔ بتایا گیا ہے کہ بدھ کے روز مولانا فضل الرحمان کی صدارت میں پارٹی رہنماؤں کا اعلیٰ سطحی اجلاس ہوا جس میں سینیٹر مولانا عطاء الرحمان ،علامہ راشد سومرو، مولانا سعید یوسف اور عبداللہ خیلجی شریک تھے۔
اجلاس میں سینیٹر طلحٰہ محمود، ایم این اے آغا محمود شاہ، ایم این اے مفتی عبدالشکور، ڈاکٹر عتیق الرحمن اور پیر مدثر تونسوی بھی شریک تھے۔جے یو آئی ف کے سربراہ نے اجلاس کے دوران شرکاء کو ہدایت دی کہ آزادی مارچ کے انتظامات کو جلد حتمی شکل دیں۔انہوں نے کہا کہ کارکنان کسی بھی منفی پروپیگنڈہ کا حصہ نہ بنیں اور اپنی تیاریوں کو تیز کریں۔اجلاس میں آزادی مارچ کے انتظامات کا جائزہ لیا گیا جبکہ کارکنوں اور پارٹی رہنماؤں کو بلاوجہ پولیس کی جانب سے تنگ کرنے پر غور کیا گیا۔اجلاس میں آزادی مارچ کے مقام ڈی چوک کے انتظامات کا جائزہ بھی لیا گیا۔
                      

تاریخ اشاعت : بدھ 9 اکتوبر 2019

Share On Whatsapp