گلوکارعلی ظفر ہتک عزت دعویٰ کیس‘ عدالت نے سماعت 19ستمبر تک ملتوی کردی

لاہور۔12 ستمبر : لاہور کی سیشن عدالت نے معروف گلوکار علی ظفر کے ہتک عزت کے دعوے پر علی ظفر کے ایک گواہ پر جرح مکمل کرلی ۔عدالت نے علی ظفر کے بیان پر گزشتہ روز جرح کرنے کی استدعا مسترد کرتے ہوئے 19ستمبر کو طلب کرلیا۔ گلوکارہ میشا شفیع کے خلاف ہتک عزت کے دعوے کی سماعت کیلئے گلوکار علی ظفر سیشن کورٹ پیش ہوئے۔ دوران سماعت میشا شفیع کے وکیل نے گلوکار علی ظفر کی گواہ سارہ رحمان کے بیان پر جرح مکمل کر لی۔
دوران سماعت علی ظفر نے عدالت سے کہا کہ میں ڈیرھ سال سے انصاف مانگ رہا ہوں میشاء شفیع کے وکیل ہر بار تاریخ مانگتے ہیں۔علی ظفر نے عدالت سے استدعا کی وہ یورپ سے صرف کیس کی تاریخ کے لیے واپس آئے ہیں لہٰذا عدالت آج ہی ان کے بیان پر بھی جرح شروع کرنے کا حکم دے ۔گلوکارہ میشا شفیع کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ علی ظفر کے بیان پرجرح کیلئے تیاری کرنا باقی ہے لہذا عدالت آج کیس کی سماعت ملتوی کرے،دوران سماعت علی ظفر نے بیان دیا کہ میشاء شفیع کے وکیل پہلے بھی 8بار تاریخیں لے چکے ہیںانکا پلان ہے کہ کیس کو التوا میں رکھا جائے ۔
عدالت نے دلائل مکمل ہونے پر میشا شفیع کے وکیل کی استدعا منظور کرتے ہوئے علی ظفر کے بیان پر جرح کیلئے تیاری کا وقت دیتے ہوئے کیس کی سماعت 19ستمبر تک ملتوی کردی،واضح رہے کہ گلوکار علی ظفر نے جنسی ہراسگی کے الزامات لگانے پر میشا شفیع کے خلاف ایک ارب ہرجانے کا دعوا دائر کررکھا ہے۔ گ ش/غ م

تاریخ اشاعت : جمعرات 12 ستمبر 2019

Share On Whatsapp