چیئرمین نیب کے تقرر کے خلاف درخواست پر وفاقی حکومت سے جواب طلب

لاہور : لاہور ہائیکورٹ نے چیئرمین نیب کے تقرر کے خلاف درخواست پر وفاقی حکومت سے جواب طلب کرتے ہوئے سماعت 20ستمبر تک ملتوی کر دی ۔ جسٹس مظاہر علی اکبر نقوی نے قانون دان اے کے ڈوگر کی درخواست پر سماعت کی ۔ درخواست گزار نے موقف اپنایا کہ چیئرمین نیب کا تقرر وزیراعظم اور کابینہ کی ہدایت ملنے کے بعد صدر پاکستان کر سکتا ہے۔صدر پاکستان نے چیئرمین نیب کے تقرری وزیراعظم اور کابینہ کی ہدایت کے بغیر ازخود کی اور بعد میں مشاورت کی گئی ۔
آئین کے آرٹیکل 48 (1) مطابق صدر پاکستان وزیراعظم اور کابینہ کی ہدایت کے بغیر کوئی بھی کام نہیں کر سکتا۔درخواست نے مزید موقف اپنایا کہ نیب آرڈیننس 1999 کی شق 6 بی آئین کے آرٹیکل 48 سے منافی ہے جسے غیر قانونی قرار دیا جائے۔ درخواست نے استدعا کی کہ عدالت چیئرمین نیب کا تقرر کالعدم قرار دے کر عہدے سے ہٹانے حکم دے، استدعاعدالت نے درخواست پر مزید کاروائی 20 ستمبر تک ملتوی کر دی۔

تاریخ اشاعت : جمعرات 12 ستمبر 2019

Share On Whatsapp