دُبئی میں افغانی باشندے کو اسمگلنگ کے الزام میں قید کی سزا

ملزم نے کسٹم حکام کو چکمہ دینے کے لیے منشیات نگل رکھی تھی، مگربُر دُبئی کے علاقے میں طبیعت خراب ہونے پر پکڑا گیا

دُبئی : دُبئی کی عدالت نے ایک افغانی نوجوان کو منشیات کی اسمگلنگ کے الزام میں سات سال قید کی سزا سُنا دی ہے۔ استغاثہ کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ ملزم کے معدے سے ممنوعہ دوائی میتھا میفٹین کی 181 گرام وزن کی گولیاں برآمد ہوئی تھیں۔ جو اُس نے کسٹم حکام کو چکمہ دینے کی خاطر دہی کے ساتھ نگل لی تھیں۔ مگر طبیعت خراب ہو جانے پر وہ پکڑا گیا۔ تفصیلات کے مطابق ملزم ایئر پورٹ سے تو صحیح سلامت نکل آیا مگر جب وہ بُر دُبئی کے علاقے سے گزر رہا تھا تو اچانک اُس کی طبیعت خراب ہو گئی اور وہ وہیں ایک عمارت کے قریب گہری نیند سو گیا۔
جب ایک سیکیورٹی گارڈ نے اُسے سڑ ک کے کنارے نیم بے ہوشی کی حالت میں پڑا ہوا پایا تو فوری طور پر پولیس کو اطلاع دے دی۔ جب 27 سالہ ملزم کو تفتیش کی غرض سے تھانے لے جایا گیا تو اُس کی حالت بہت خراب تھی۔ اُس کے اعصاب بھی کام نہیں کر رہے تھے اور ٹھیک طرح سے چل بھی نہیں پا رہا تھا۔ تھانے کے اہلکار کے مطابق وہ مسلسل پانی کی فرمائش کرتا رہا اور تھانے کی کُرسی پر بیٹھنے کی بجائے لیٹ ہی گیا۔
ملزم نے تفتیش کے دوران بتایا کہ اُس نے نشہ آور ادویات دہی کے ساتھ نگل لی تھیں۔ تاکہ دُبئی پہنچنے پر یہ ادویات ایک نامعلوم شخص کو پہنچا سکے۔ اُسے اس کام کے لیے ایک ہم وطن نے 5500 درہم کی رقم بھی دی تھی۔ ملزم کی جانب سے اس انکشاف کے بعد اُسے اینٹی نارکوٹک ڈیپارٹمنٹ کے حوالے کر دیا گیا تھا۔ جسے عدالت کی جانب سے منشیات کی اسمگلنگ کے جُرم میں سات سال قید کی سزا سُنا دی گئی۔

تاریخ اشاعت : ہفتہ 24 اگست 2019

Share On Whatsapp