کابل میں خودکش دھماکہ میں 63 افراد ہلاک، 180 زخمی

دھماکہ شادی کی تقریب میں ہوا، طالبان نے دھماکے کی مذمت کر دی: افغان حکام

کابل : افغانستان کے دارالحکومت کابل میں شادی کی تقریب میں دھماکہ ہوا ہے۔ دھماکے سے کم از کم 63 افراد ہلاک اور 182زخمی ہوگئےہیں۔رپورٹ کے مطابق دھماکا ہفتے کی رات کو مغربی کابل کے شادی ہال میں جاری ایک شادی کی تقریب کے دوران پیش آیا۔واقعہ کے بعد امدادی ٹیموں نے زخمیوں کو فوراً اسپتال منتقل کیا جہاں ہلاکتوں میں مزید اضافے کا خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے۔
افغان حکام کے مطابق خود کش دھماکے کے وقت شادی ہال لوگوں سے بھرا ہوا تھا، اطلاعات کے مطابق شادی کی تقریب میں تقریباً 1000 افراد شریک تھے۔برطانوی میڈیا کے مطابق عینی شاہدین نے بتایا کہ ایک خودکش بمبار نے شادی کی تقریب میں خود کو دھماکا خیز مواد سے اڑادیا، دھماکہ مقامی وقت کے مطابق رات 10 بج کر 40 منٹ پر ہوا۔دھماکے کے بعد پولیس اور قانون نافذ کرنے والے اداروں نے جگہ کو گھیرے میں لیکر تحقیقات شروع کردی ہیں اور شواہد اکھٹے کیے جارہے ہیں۔
افغان حکام کے مطابق طالبان نے حملے میں کسی بھی طرح سے ملوث ہونے کی تردید کردی اور طالبان کی جانب سے خودکش حملے کی مذمت کی بھی گئی ہے جب کہ ابھی تک کسی دوسرے گروپ کی جانب سے حملے کی ذمہ داری قبول نہیں کی گئی ہے۔ترجمان دفتر خارجہ پاکستان نے کابل میں ہونے والی دہشت گردی کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان کابل بم حملے کے متاثرین سے دلی ہمدردی کا اظہار کرتا ہے، جاں بحق ہونے والوں کی مغفرت اور زخمیوں کی جلد صحت یابی کے لئے دعا گو ہیں، پاکستان دہشت گردی کی ہر شکل کی مذمت کرتا ہے، دہشت گردی پورے خطے کے لیے مشترکہ خطرہ ہے اور دہشت گردی کو مل کر شکست دینے کی ضرورت ہے۔

تاریخ اشاعت : اتوار 18 اگست 2019

Share On Whatsapp