مریم نواز کی گرفتاری سے ن لیگ کا سب سے بڑا نقصان

مریم نواز کی غیر موجودگی میں جلسے جلوس کی قیادت کرنے کے لیے ن لیگ کی قیادت بظاہر نظر نہیں آ رہی،حالیہ گرفتاری سے ن لیگ کی مہم خاصی متاثر ہو گی۔ سینئیر تجزیہ نگار

لاہور : معروف صحافی عارف حمید بھٹی کا کہنا ہے کہ فی الحال مریم نواز کی ضمانت ممکن نہیں۔مریم نواز کا کیس چلے گا اس کے بعد سزا ہو گی۔جس کا سب سے زیادہ اثر اُس تحریک پر پڑے گا جو مسلم لیگ ن نے عوام میں چلائی ہے۔مریم نواز کی گرفتاری سے ن لیگ کی جلسے جلوسوں کی سیاست خاصی متاثر ہو گی کیونکہ مریم نواز دو تین اداروں کو ہدف بنا رہی تھی اور وہ اس حوالے سے بہت غصے میں بھی تھیں۔
جس پر یہ فیصلہ کیا گیا کہ چونکہ مریم نواز کے خلاف ثبوت موجود ہیں لہذا انہیں گرفتار کر لیا جائے۔مسلم لیگ ن کو سب سے زیادہ نقصان یہ ہو گا کہ جلسے اور ریلیوں کی قیادت کرنے کے لیے کوئی موجود نہیں۔ریلیوں کی قیادت کرنے کے لیے ن لیگ کی قیادت بظاہر نطر نہیں آ رہی۔مریم نواز نے ہی ریلیاں نکالنے کی ذمہ داری لی ہوئی تھی۔مریم نواز دو روز قبل خود بھی یہ بیان دے چکی ہیں کہ وہ ریلیاں نکالنے کا سلسلہ بند نہیں کریں گی بے شک انہیں گرفتار کر لیا جائے۔
خیال رہے کہ آج نیب لاہور نے مسلم لیگ( ن) کی مرکزی رہنما مریم نواز کو کوٹ لکھپت جیل کے باہر سے حراست میں لیا تھا، مسلم لیگ( ن) کی نائب صدر کو چودھری شوگر ملز کیس میں طلب کیا گیا تھا جس میں عدم حاضری کی بناء پر حراست میں لیا گیا جبکہ دوسری کارروائی میں مریم نواز کے کزن اور میاں عباس کے صاحبزادے یوسف عباس کو بھی حراست میں لے لیا گیا ہے۔
مریم نواز جمعرات کی صبح اپنے والد نوازشریف کو ملنے کیلئے کوٹ لکھپت جیل گئی تھیں، جیسے ہی وہ ملاقات کر کے جیل سے باہر نکلیں انھیں نیب کی ٹیم نے حراست میں لے لیا، دوسری جانب نوازشریف کے بھتیجے یوسف عباس کو بھی گرفتار کر لیا گیا ہے۔.ذرائع کے مطابق مریم نواز کو نیب نے چودھری شوگر ملز اور منی لانڈرنگ کیس میں طلب کر رکھا تھا لیکن وہ حاضر نہیں ہوئی تھیں جس پر ادارے کی جانب سے کارروائی کی گئی جبکہ یوسف عباس کو بھی تفتیش کیلئے طلب کیا گیا تھا۔

تاریخ اشاعت : جمعرات 8 اگست 2019

Share On Whatsapp