پاکستانی سیکیورٹی گارڈ جعلی ویزوں کے معاملے میں گرفتار ہو گیا

پاکستانی ملزم نے اپنے ایک ہم وطن سے رقم وصول کر کے اُسے جعلی ویزے جاری کیے تھے

دُبئی : دُبئی پولیس نے ایک پاکستانی گارڈ کو جعلسازی اور دھوکا دہی کے معاملے میں گرفتار کر لیا ہے۔ ملزم نے اپنے ایک ہم وطن سے 76 ہزار درہم کی رقم ہتھیا کر بدلے میں جعلی ویزے تھما دیئے تھے۔ استغاثہ کی جانب سے 33 سالہ پاکستانی گارڈ پر اماراتی ویزہ محکمہ کے نام سے 15 عدد جعلی ویزے جاری کرنے ، دھوکا دہی اور رقم ہتھیانے کے الزامات عائد کیے گئے ہیں۔
جعلسازی کے اس واقعے کی رپورٹ الرشیدیہ پولیس اسٹیشن میں درج کروائی گئی تھی۔ پاکستانی مُدعی نے عدالت کو بتایا کہ اُس نے پاکستان میں مقیم اپنے چند رشتہ داروں کو دُبئی کا ویزہ دلوانے کی خاطرملزم سیکیورٹی گارڈ کو مختلف مواقع پر مجموعی طور پر 76 ہزار 1 سو درہم کی رقم دی تھی۔ سیکیورٹی گارڈ میرادوست تھا جس نے مجھے یقین دلایا تھا کہ وہ مجھے روزگار ویزے جاری کروا دے گا۔
ملزم نے اُسے مختلف مواقع پر واٹس ایپ کے ذریعے ویزہ کی کاپیاں بھی بھجوائیں۔ تاہم جن لوگوں کو ویزے جاری کیے گئے تھے، جب وہ پاکستانی ایئرپورٹ پر پہنچے تو اُنہیں حکام نے بتایا کہ اُن کے پاس موجود ویزے جعلی ہیں۔ جب میں نے اپنے مُلزم دوست سے ناراضگی کا اظہار کیا تو اُس نے کہا کہ وہ ویزوں میں درستگی کروا دے گا۔ جب میں نے ملزم سے رقم کی واپسی کا تقاضا کیا تو ملزم نے مجھے کہا کہ جاؤ میرے خلاف پولیس اسٹیشن میں مقدمہ درج کروا دو۔میں نے ملزم کو 43 افراد کے ویزوں کے لیے پیسے دیئے تھے۔ جن میں سے اُس نے 15 کے ویزے بھیجے مگر وہ بھی جعلی نکلے۔ اس مقدمے کا فیصلہ 31 جولائی 2019ء کو سُنایا جائے گا۔

تاریخ اشاعت : جمعہ 26 جولائی 2019

Share On Whatsapp