'I Will Never Regret The Decision' - Kumar Dharmasena

ورلڈ کپ فائنل ، انگلینڈ کو اضافی رن دینے والے امپائر نے غلطی کا اعتراف کرلیا

ٹی وی پر ری پلے دیکھا تو معلوم ہوا کہ فیصلہ کرنے میں غلطی ہوئی ، اپنے فیصلے پر کوئی پچھتاوا نہیں:کماردھر ماسینا

کولمبو : انگلینڈ نے ورلڈ کپ کے فائنل میں نیوزی لینڈ کو شکست دے کر ٹائٹل جیت لیاہے لیکن یہ میچ اپنے انفرادیت کے باعث صدیوں تک یاد رکھا جائے گا۔ تفصیلات کے مطابق میچ کے بعد ہر طرف یہ ہنگامہ برپا تھا کہ امپائر نے ہدف کے تعاقب کے دوران انگلینڈ کو ایک رن اضافی دیاہے اوراب امپائر نے بھی اس غلطی کا اعتراف کرتے ہوئے وضاحت جاری کر دی ہے۔ یہ واقع اسوقت پیش آیا جب انگلینڈ کے بین سٹوکس دوسرا رن مکمل کرنے کیلئے وکٹ کی طرف بھاگ رہے تھے تو فیلڈر نے گیند تھرو کی جو سٹوکس کے بیٹ سے لگ کر دوسری جانب چلی گئی اور گیند باﺅنڈری کے پار ہو گئی۔
ایمپائر کی جانب سے انگلینڈ کو اوور تھرو کے چوکے اور بھاگ کر بنائے گئے دو رنز سمیت چھ سکور دیئے گئے۔ جسکے بعد یہ بحث شروع ہو گئی کہ دوسرا رن مکمل نہیں ہوا تھا اور اس سے پہلے ہی گیند کھلاڑی کے بیٹ کو لگ گئی اس لیے پانچ رنز دیئے جانے چاہیے تھے لیکن ایک سکور فالتو دیا گیاہے۔ورلڈ کپ کے فائنل میچ میں سری لنکا کے ” کمار دھرما سینا “ امپائرنگ کے فرائض انجام دے رہے تھے ،انہوں نے ایک اخبار کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا ہے کہ ” جب میں نے ٹی وی پر ری پلے دیکھا تو معلوم ہوا کہ وہاں فیصلہ کرنے میں غلطی ہوئی تھی جس کا میں اعتراف کرتا ہوں لیکن ہمارے پاس میدان میں ٹی وی کا ری پلے دیکھنے کی سہولت میسر نہیں ہو تی اس لیے مجھے اپنے فیصلے پر کوئی پچھتاوا نہیں ہے، ان کا کہناتھا کہ ” میں نے چھ رنز دیگر حکام سے مشاورت کے بعد دیئے تھے ،میں نے ساتھی لیگ ایمپائر سے کمیونیکیشن سسٹم کے ذریعے مشورہ کیا جسے میچ ریفری سمیت دیگر میچ آفیشلز نے بھی سنا“۔
سری لنکن امپائر کا کہناتھا کہ ” ہم ٹی وی پر ری پلے چیک نہیں کر سکتے ، اس وقت تمام نے بلے باز کی جانب سے دوسرا رن مکمل ہونےکی تصدیق کی تھی جسکے بعد ہی میں نے اپنا فیصلہ دیا تھا۔“جبکہ آئی سی سی کے سابق ایمپائر سائمن ٹوفل نے ایک اضافی رن دینے کی غلطی کی نشاندہی کی تھی۔یاد رہے کہ 50 اوورز میں میچ ٹائی ہو گیا تھا جسکے بعد آئی سی سی نے سپر اوور دینے کا فیصلہ کیا جس میں انگلینڈ نے نیوزی لینڈ کو جیت کیلئے 16 رنز کا ہدف دیا۔ نیوزی لینڈ نے سپر اوور میں 15 رنز مکمل کرکے سکور برابر کر دیا لیکن یہاں پر فیصلہ باﺅنڈریز کی بنیاد پر ہوا اور کیو ں کہ انگلینڈ نے میچ زیادہ باﺅنڈریاں لگائیں تھیں اس لیے اسے ورلڈ چیمپئن قرار دیدیا گیا ۔

تاریخ اشاعت : اتوار 21 جولائی 2019

Share On Whatsapp