ورلڈکپ فائنل میں شکست نے جان لے لی، نیوزی لینڈ کی کرکٹ ٹیم سوگ میں ڈوب گئی

کیوی کرکٹر جمی نیشام کے قریبی ترین رفیق اور کوچ جان کی بازی ہار گئے، ڈیوڈ گورڈن کرکٹ ورلڈ کپ کے آخری اوور میں جہاں فانی سے کوچ کر گئے

لاہور : ورلڈکپ فائنل میں شکست نے جان لے لی، نیوزی لینڈ کی کرکٹ ٹیم سوگ میں ڈوب گئی، کیوی کرکٹر جمی نیشام کے قریبی ترین رفیق اور کوچ جان کی بازی ہار گئے، ڈیوڈ گورڈن کرکٹ ورلڈ کپ کے آخری اوور میں جہاں فانی سے کوچ کر گئے۔ تفصیلات کے مطابق ورلڈکپ کے فائنل میں سنسنی خیز میچ اور پھر متنازعہ نتیجے کے باعث نیوزی لینڈ کرکٹ کے بڑے نام کی موت واقع ہوگئی ہے۔
ورلڈکپ فائنل میں شکست نیوزی لینڈ کرکٹ ٹیم کے اہم ترین کھلاڑی اور آلراونڈر جمی نیشام کے کوچ کی جان لے گئی۔ بتایا گیا ہے کہ کیوی آل راونڈر جمی نیشام کی بچپن میں کوچنگ کرنے والے ڈیوڈ گورڈن کرکٹ ورلڈ کپ کے آخری اوور میں زندگی کی بازی ہار گئے۔ سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹویٹر پر جاری کیے گئے پیگام میں کیوی آل راؤنڈر جمی نیشام کی جانب سے افسوسناک خبر دی گئی۔
جمی نیشام نے بتایا کہ ڈیوڈ گورڈن میرے بچپن کے کوچ اور اچھے دوست تھے۔ ورلڈکپ کا فائنل بہت سنسنی خیز تھا اور میچ کے دوران میرے کوچ اپنی جان کی بازی ہار بیٹھے۔ جمی نیشام کا کہنا ہے کہ میں اپنے کوچ پر ہمیشہ فخر کرتا رہوں گا۔ مجھے سب کچھ سکھانے پر ان کا بہت شکریہ ادا کرتا ہوں۔ اس حوالے سے ڈیوڈ گورڈن کی صاحبزادی لیونی گورڈن کی جانب سے بھی خصوصی بیان جاری کیا گیا۔
ٹوئٹر پر جاری کیے گئے پیغام میں لیونی گورڈن نے تفصیلات سے آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ ورلڈکپ فائنل کے سپر اوور میں جب کیویز ٹیم کو 15 رنز درکار تھے اس دوران جمی نیشام نے چھکا لگایا تو انکے والد نے آخری سانسیں لیں۔ ہسپتال کے بستر پر موجود میرے والد ڈیوڈ گورڈن خود بھی اسی طرح سے دنیا سے رخصت ہونے کے خواہش مند تھے۔ ورلڈکپ فائنل میچ کے آخری اوورز کے دوران ایک نرس آئی اور اس نے بتایا کہ ان کی سانس اکھڑ رہی ہے۔
بعد میں پھر جب جمی نیشام نے جس وقت سپر اوور میں چھکا لگایا، اسی وقت میرے والد نے آخری سانس لی۔ واضح رہے کہ ورلڈکپ فائنل میں نیوزی لینڈ کو انگلینڈ کے ہاتھوں متنازعہ شکست کا سامنا کرنا پڑا۔ نیوزی لینڈ اور انگلینڈ کے درمیان فائنل ٹائی ہو گیا تھا جس کے بعد سپر اوور میں مقابلہ ہوا۔ سپر اوور بھی ٹائی رہا اور انگلینڈ کو متنازعہ طور پر زیادہ باونڈریز کی بنیاد پر فاتح قرار پایا تھا۔

تاریخ اشاعت : جمعرات 18 جولائی 2019

Share On Whatsapp