Players Were Not Happy With Mickey Arther Even Before World Cup 2019

ورلڈ کپ سے پہلے کرکٹرز کی جانب سے ہیڈ کوچ کیخلاف بغاوت کا انکشاف

انگلینڈ سے بری طرح شکست پر کھلاڑیوں نے بورڈ کو مکی آرتھر کیساتھ مزید نہ کھیلنے کا پیغام دیا

لندن : ورلڈ کپ سے قبل ہی قومی کرکٹرز اور ہیڈ کوچ مکی آرتھر کے مابین اختلافات کی خبروں کی تصدیق ہوگئی ہے ۔قومی ٹیم کے کھلاڑیوں کی کوچ سے اختلافات کی خبریں پہلے ہی گردش میں تھیں لیکن اب اس بات کی تصدیق ہوگئی ہے کہ اختلافات انگلینڈ کے خلاف سیریز میں ہوئے۔انگلینڈ کیخلاف چوتھے ون ڈے میں جب ٹیم 340 رنز کرنے کے باوجود ہار گئی تو ہیڈ کوچ نے کھلاڑیوں کی خوب ڈانٹ ڈپٹ کی،جب پانچواں میچ بھی قومی ٹیم برے طریقے سے ہاری تو کوچ کی ڈانٹ میں مزید سختی آگئی جسکا کھلاڑیوں نے برا منایا اور پی سی بی کو شکایت کرتے ہوئے کہا کہ غیر ضروری اور سخت ڈانٹ کی وجہ سے اب وہ مکی آرتھر کے ساتھ مزید نہیں کھیلیں گے ۔
ذرائع کے مطابق قومی کھلاڑی بغاوت پر اتر آئے تھے اور موقع کی نزاکت کو دیکھتے ہوئے بورڈ نے 23مئی کو چیف سلیکٹر انضمام الحق کوانگلینڈ بھیجنے کا فیصلہ کیا، انضمام الحق نے انگلینڈ پہنچتے ہی صورت حال کو کنٹرول کیا اور کھلاڑیوں کو سخت پیغام دیا،انضمام الحق نے کھلاڑیوں اور کوچ کے درمیان پل کا کردار ادا کیا، انضمام الحق کو انگلینڈ بلانے کی تجویز میں کپتان سرفراز احمد پیش پیش تھے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ کھلاڑیوں اور کوچ مکی آرتھر کے درمیان تعلقات اب بھی مثالی نہیں ہیں، ان کی آپس میں بول چال بھی کم ہے۔موجودہ حالات میں ہیڈ کوچ مکی آرتھر کے ساتھ پی سی بی مزید معاہدے کی تجدید نہ کرنے فیصلہ کر چکا ہے۔ 

تاریخ اشاعت : منگل 18 جون 2019

Share On Whatsapp