بھارت کا گاﺅں جس میں 71سالوں سے بجلی نہیں

ریاست چھتیس گڑھ کے گاﺅں تریشولی میں تقسیم سے آج تک بجلی فراہم نہیں کی جاسکی

نئی دہلی : دنیا کے سب سے بڑے جمہوری ملک بھارت میں ایک گاﺅں ایسا بھی ہے جہاں 71 سالوں سے بجلی نہیں ہے. بھارتی ذرائع ابلاغ کی رپورٹ کے مطابق چھتیس گڑھ کے گاﺅں تریشولی میں 71 سال سے بجلی نہیں ہے اور یہاں کے 70 سالہ باسی ر میش پال کا کہنا ہے کہ جب سے وہ پیدا ہوئے ہیں انہوں نے بجلی نہیں دیکھی. انہوں نے صحافیوںسے بات کرتے ہوئے بتایا کہ تریشولی میں تقریباً 100 گھر آ باد ہیں، بجلی نہ ہونے کی وجہ سے رہائشی مشکلات کاشکار ہیں، بچے رات میں لالٹین کی روشنی میں پڑھنے پر مجبور ہیں،اور اس علاقے میں مٹی کا تیل بھی بہت کم میسر آ تا ہے.
رمیش پال کا کہنا ہے کہ الیکشن کے دنوں میں یہاں بہت سی سیاسی شخصیات کا گزر ہو تا ہے مگر کوئی بھی آج تک ہمارا یہ مسئلہ حل نہیں کر پایا، شاید وہ کرنا ہی نہیں چاہتے۔وہ صرف ہمیں امیدیں دلاکر ووٹ مانگ کر چلے جاتے ہیں. ایک مقامی خاتون کا کہنا ہے کہ بجلی نہ ہونے کی وجہ سے رات میں بچھو، سانپ اور کیڑے مکوڑوں کے کاٹنے کے واقعات دن بدن بڑھتے جا رہے ہیں.
واضح رہے کہ تریشولی گاﺅں میں پانی کی بھی شدید قلت کے باعث ایک ہی تالاب ہے ، یہاں کے رہائشی اور جانور ایک ہی تالاب سے پانی پیتے اور استعمال کرنے پر مجبور ہیں. بجلی نہ ہونے کی وجہ سے رہائشی مشکلات کاشکار ہیں، بچے رات میں لالٹین کی روشنی میں پڑھنے پر مجبور ہیں،اور اس علاقے میں مٹی کا تیل بھی بہت کم میسر آ تا ہے. رمیش پال کا کہنا ہے کہ الیکشن کے دنوں میں یہاں بہت سی سیاسی شخصیات کا گزر ہو تا ہے مگر کوئی بھی آج تک ہمارا یہ مسئلہ حل نہیں کر پایا، شاید وہ کرنا ہی نہیں چاہتے۔وہ صرف ہمیں امیدیں دلاکر ووٹ مانگ کر چلے جاتے ہیں. ایک مقامی خاتون کا کہنا ہے کہ بجلی نہ ہونے کی وجہ سے رات میں بچھو، سانپ اور کیڑے مکوڑوں کے کاٹنے کے واقعات دن بدن بڑھتے جا رہے ہیں.

تاریخ اشاعت : جمعرات 13 جون 2019

Share On Whatsapp