خیبرپختونخواہ میں بندوق کے زور پر بچے سے مبینہ زیادتی

پولیس نے واقعہ رپورٹ ہونے پر ملزم کو گرفتار کر لیا

پشاور : : خیبرپختونخواہ میں بندوق کے زور پر بچے کو مبینہ زیادتی کا نشانہ بنادیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق خیبرپختونخوا کے علاقہ چمکنی میں بندوق کے زور پر بچے کے ساتھ مبینہ طور پر زیادتی کی گئی ، واقعہ رپورٹ ہونے پر پولیس نے ایک ملزم کو گرفتار کرلیا۔ پولیس نے اس بات کی تصدیق کی کہ انہوں نے چمکنی کے علاقہ میں ایک مشتبہ شخص کو بندوق کے زور پر مبینہ طور پر بچے سے دست درازی کرنے پر گرفتار کیا۔
دوسری جانب متاثرہ بچے نے چمکنی تھانے میں شکایت درج کروائی ۔ تھانے میں درج کروائی گئی شکایت میں کہا گیا کہ 2 افراد نے بندوق کے زور پر مجبور کرکے چمکنی کے علاقہ میں زیادتی کا نشانہ بنایا اور گھناؤنے فعل کے ارتکاب کے بعد فرار ہوگئے۔ پولیس نے واقعہ کی ایف آئی آر درج کرنے کے بعد ایک ملزم کو گرفتار کرلیا جبکہ دوسرا ملزم تاحال مفرور ہے جس کہ گرفتاری کے لیے کوششیں کی جا رہی ہیں۔
تاہم پولیس نے درج کروائے گئے مقدمے میں دونوں ملزمان کو ہی نامزد کیا۔ اس حوالے سے ایس ایچ او چمکنی ارباب نعیم کا کہنا تھا کہ ایک ملزم کو گرفتار کرلیا ہے جبکہ دوسرے کو بھی جلد گرفتار کرلیا جائے گا۔ ایس ایچ او ارباب نعیم کا کہنا تھا کہ پولیس اس کیس میں مزید تحقیقات کر رہی ہے۔ خیال رہے کہ حال ہی میں پاکستان میں بچوں کے ساتھ جنسی فعل اور زیادتی کے کئی واقعات رپورٹ ہوئے ہیں جنہوں نے والدین کو مزید محتاط کر دیا ہے۔
گھناؤنے فعل کی روک تھام کے لیے وزیراعظم عمران خان نے مجرموں کو سزائے موت دینے کے لیے مؤثر قانون سازی کرنے کی ہدایت کر رکھی ہے۔ اس حوالے سے مشیر اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے بتایا کہ وزیراعظم عمران خان نے حکم دیا کہ بچوں سے جنسی زیادتی میں ملوث ملزمان کو سزائے موت دلوانے کے لیے مؤثر اقدامات کیے جائیں۔ وزیراعظم نے پاکستان تحریک انصاف کے اراکین اسمبلی کو حکم دیا کہ بچوں سے جنسی زیادتی میں ملوث افراد کو سزائے موت دلوانے کے لیے فوری طور پر مؤثر قانون سازی کی جائے۔ پاکستانی عوام نے وزیراعظم عمران خان کےاس فیصلے کو خوب سراہا اور کہا کہ وزیراعظم عمران خان کا یہ فیصلہ قابل ستائش ہے جس کی جتنی تعریف کی جائے اُتنی کم ہے۔

تاریخ اشاعت : بدھ 12 جون 2019

Share On Whatsapp