صحت کارڈ کے اجراء سے شہریوں کو علاج معالجے کی بہترین سہولیات میسر آئیں گی ،ْ ڈاکٹر یاسمین راشد

موجودہ حکومت شہریوں کو جدید طبی سہولیات کی فراہمی کے لیئے تمام وسائل بروئے کار لا رہی ہے ،ْ ثمرات جلد عوام تک پہنچنا شروع ہو جائینگے ،ْ میڈیا سے گفتگو

راولپنڈی : صوبائی وزیر برائے پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ ,سپیشلائزڈ ہیلتھ کیئر اینڈمیڈیکل ایجوکیشن پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا ہے کہ صحت کارڈ کے اجراء سے شہریوں کو علاج معالجے کی بہترین سہولیات میسر آئیں گی ،ْ موجودہ حکومت شہریوں کو جدید طبی سہولیات کی فراہمی کے لیئے تمام وسائل بروئے کار لا رہی ہے جس کے ثمرات بہت جلد عوام تک پہنچنا شروع ہو جائیں گے ،ْراولپنڈی انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی سمیت تمام سرکاری ہسپتالوں میں مستحق مریضوں کے مفت علاج معالجے کے لیئے مزید اقدامات کیے جائیں-انہو ںنے ان خیالات کا اظہار راولپنڈی انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی(آر آئی سی) کے دورے کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہی․ اس موقع پرہسپتال کے سی ای او میجر جنرل (ر) اظہر محمود کیانی , راولپنڈی میڈیکل یونیورسٹی کے وائس چانسلر ڈاکٹر عمر, ایم ایس ڈاکٹر شعیب خان, اے ایم ایس ڈاکٹر سہیل اورہسپتال کے سنیئر ڈاکٹرز ان کے ہمراہ تھے ۔
صوبائی وزیر نے اس موقع پر آر آئی سی کی ایمرجنسی , لانڈری ,بائیو میڈیکل اور دیگر شعبوں کا معائینہ کیا اور مختلف شعبوں میں امراض کی تشخیص اور علاج معالجے اور دیگر سہولیات کا جائزہ لیا ․ ہسپتال کے چیف ایگزیکٹو میجر جنرل (ر) اظہر محمود کیانی نے صوبائی وزیر کو ہسپتال میں جدید ترین مشینری کے ذریعے امراض دل کی تشخیص اور دیگرمالی و انتظامی امور بارے بریفنگ دی ․ صوبائی وزیر کو بتایا گیا کہ کسی بھی ایمرجنسی کی صورت میں صرف پندرہ منٹ کے اندر اندر مریض کو ہنگامی طبی امدادفراہم کر دی جاتی ہے ․ انہیں بتایا گیا کہ ہسپتال میں 80 فیصد مریضوں کا علاج فری ہوتا ہے اور دن دو بجے کے بعدہسپتال میں دل کے مریضوںکا پرائیویٹ طرزپر علاج معالجہ کیا جاتا ہے ․وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد نے اس امر پر تشویش کا اظہار کیا کہ ڈاکٹرز دیہات کی بجائے شہروں میں تعیناتی کے لیئے کوششوں میں رہتے ہیں جس کی وجہ سے دیہات میں رہنے والا طبقہ صحت کی سہولیات سے اس طرح مستفید نہیں ہو رہا ہے ․ انہو ںنے کہا کہ شعبہ طب سے وابستہ افراد اپنے پیشے کی تقدیس کا خیال کرتے ہوئے غریب , متوسط اور مستحق ہم وطنوں کا قومی جذبے سے علاج معالجہ کریں تاکہ بیماریوں پر قابو پا کر صحتمند معاشرے کے قیام کی جانب پیش قدمی کی جا سکے ۔

تاریخ اشاعت : پیر 3 دسمبر 2018

Share On Whatsapp