آرمی چیف کی ایکسٹینشن سے متعلق جلد فیصلہ ہوجائے گا، پی آئی سی واقعے پر کالے کوٹ کو بڑی ندامت اٹھانی پڑی،شیخ رشید

مارچ تک نیب کو بہت ساری رقم پلی بارگین کی شکل میں ملے گی،الیکشن کمیشن پر اپوزیشن سے مل بیٹھ کر بہتر فیصلہ کریں گے،وفاقی وزیرریلوے

کراچی : وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشیداحمدنے کہاہے کہ آرمی چیف کی ایکسٹینشن سے متعلق جلد فیصلہ ہوجائے گا، پی آئی سی واقعے پر کالے کوٹ کو بڑی ندامت اٹھانی پڑی، اسپتالوں پر پڑھا لکھا طبقہ حملہ نہیں کر سکتا، پی آئی سی واقعے سے وکلا کا اپنا امیج تباہ ہوا،مارچ تک نیب کو بہت ساری رقم پلی بارگین کی شکل میں ملے گی،الیکشن کمیشن پر اپوزیشن سے مل بیٹھ کر بہتر فیصلہ کریں گے، مولانا فضل الرحمن سے دسمبر کے بعد بات کروں گا،موجودہ حکومت اپنے 5 سال پورے کرے گی، سابق صدر آصف علی زرداری اور سابق وزیر اعظم نواز شریف جیل میں جاکر زیادہ بیمار ہو جاتے ہیں، بہت سارے لیڈر نئے سال کا آغاز لندن میں کر رہے ہیں، مہنگائی اور بیروزگاری کم کرنا ہمارے لیے بڑا چیلنج ہے، کراچی سرکلر ریلوے کا 38 کلو میٹر کا ٹریک خالی کروا دیا۔
ان خیالات کا اظہار انہوں نے ہفتہ کوکراچی کیمپ آفس میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید نے کہا کہ ریلوے کے سارے مسئلوں کا حل ایم ایل ون ہے، ریلوے کی گاڑیوں میں بھی مانیٹرنگ سسٹم لگا رہے ہیں جبکہ کے بی ایکس میں نئے دو دفتر ہم کھول رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ٹریک پر اجازت دی جائیگی کہ لوگ کرایہ دیکر ٹریک استعمال کریں، جبکہ حیدر آباد، کراچی، گوجرانوالہ شٹل سروس چلانے کا ارادہ رکھتے ہیں۔
وفاقی وزیرریلوے نے کہاکہ آرمی چیف کی ایکسٹنشن طے ہے جب فیصلہ تحریری آجائے گا پھر حکومت اپنا بتائے گی۔انہوں نے کہا کہ سفید اور کالے کوٹ کی لڑائی میں کالے کوٹ کوندامت ہوئی ہے، لوگوں نے وکلا کو لعنت ملامت کی ۔شیخ رشید نے کہا کہ اگر ہم نے اکانومی اور گورننس کو بہتر کرلیا تو 5 سال کے بعد اگلے الیکشن میں بھی ہمیں ہی ووٹ ملیں گے۔انہوں نے کہا کہ آج بہت بڑا دن ہے جب آرمی پبلک میں بچوں نے شہادت حاصل کی اور دنیا کو باورکرایا کہ ہم دہشت گردی کے خلاف ہیں۔
وزیر ریلوے نے کہاکہ قائداعظم کا فلسفہ بھارت میں آج بولا جارہا ہے، شریعہ بل کے خلاف بھارت میں مسلمان یک زبان ہیں۔شیخ رشید نے کہاکہ اپوزیشن سے مل بیٹھ کر بات کرنے کا موقع ہے، مولانا سے میں دسمبر کے بعد بات کرونگا، بلاول کو پلی بارگین کرانی ہے 5بڑی کمپنیوں کے گھپلوں میں ان کا نام ہے۔وفاقی وزیر نے کہا کہ زرداری صاحب کی ضمانت ہوگئی خوشی کی بات ہے، آصف زرداری جیل کاٹ سکتے ہیں مگر نواز شریف نہیںیہ سیاستدان نہیں بلکہ یہ حادثوں کی پیداوار ہیں۔۔انہوں نے کہاکہ کوئی مائنس فارمولہ نہیں ہوگا۔ نواز شریف اور زرداری کی کوئی سیاست نہیں دیکھ رہا۔اس سال بہت سارے لوگ نیو ایئر لندن میں منا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مارچ تک نیب کو بہت ساری رقم پلی بارگین کی شکل میں ملے گی،

تاریخ اشاعت : پیر 16 دسمبر 2019

Share On Whatsapp