پاک سری لنکا راولپنڈی ٹیسٹ میچ بنا کسی نتیجے کے ختم ہونے کا امکان

کل سے شروع ہونے والا تاریخی میچ بارش کے باعث متاثر ہو سکتا ہے، میچ کے 5 میں سے 3 روز کے دوران بارش ہونے کی پیشن گوئی

راولپنڈی : پاک سری لنکا راولپنڈی ٹیسٹ میچ بنا کسی نتیجے کے ختم ہونے کا امکان، کل سے شروع ہونے والا تاریخی میچ بارش کے باعث متاثر ہو سکتا ہے، میچ کے 5 میں سے 3 روز کے دوران بارش ہونے کی پیشن گوئی۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان اور سری لنکا کی کرکٹ ٹیموں کے درمیان دو ٹیسٹ میچوں پر مشتمل سیریز کا پہلا میچ (کل) بدھ سے راولپنڈی میں شروع ہوگا۔ پاکستان میں 10 سال بعد ٹیسٹ کرکٹ کی واپسی، سری لنکن ٹیم دیمتھ کرونارتنے کی قیادت میں پاکستان پہنچ چکی ہے، دونوں ٹیموں کے کھلاڑیوں نے پہلے میچ کیلئے پنڈی سٹیڈیم میں خوب مشقیں کیں ہیں، پہلے میچ کے بارش سے مثاثر ہونے کے امکانات بھی ہیں۔
بتایا گیا ہے کہ میچ کے 3 روز بارش سے متاثر ہو سکتے ہیں جس کے باعث میچ کا نتیجہ آنا کافی مشکل ہے۔ میچ کے دوران دوسرے، تیسرے اور چوتھے روز بارش ہونے کا قوی امکان ہے۔ بتایا گیا ہے کہ راولپنڈی کرکٹ سٹیڈیم میں لگ بھگ 15 سال کے بعد ٹیسٹ کرکٹ کی واپسی ہوئی ہے، اس سے قبل 2004 میں پنڈی میں کھیلے گئے آخری ٹیسٹ میچ میں پاکستان ٹیم کو شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا، یہ میچ پاکستان اور روایتی حریف بھارت کی ٹیموں کے درمیان کھیلا گیا تھا اس میچ میں گرین شرٹس کو اننگز اور 31 رنز سے شکست ہوئی تھی، پاکستان اور سری لنکا کے درمیان سیریز ورلڈ ٹیسٹ چیمپئن شپ کا حصہ ہوگی، پاکستان کی ٹیم کے پاس ٹیسٹ کی عالمی رینکنگ میں اوپر جانے کا سنہری موقع ہے، پاکستان میں ایک روزہ اور ٹی ٹونٹی میچوں پر مشتمل سیریز کے کامیاب انعقاد کے بعد سری لنکا ٹیم فیوچر ٹور پروگرام میں شامل ٹیسٹ سیریز میں شرکت کے لئے پاکستان پہنچ چکی ہے، دونوں ٹیموں کے درمیان سیریز کے دوران سیکورٹی کے بہترین انتظامات کئے گئے ہیں۔
راولپنڈی کرکٹ سٹیڈیم کے اطراف میں سیکیورٹی کے فول پروف انتظامات کئے گئے ہیں، 42 سو کے قریب سیکیورٹی افسران اور ملازمین تعینات کئے گئے ہیں، سٹیڈیم کی سیکیورٹی پاک فوج نے سنبھال لی ہے۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان اور سری لنکا کے درمیان آج بدھ سے شروع ہونے والے پہلے ٹیسٹ میچ میں سری لنکن ٹیم دیمتھ کرونارتنے کی قیادت میں میدان میں اترے گی جبکہ گرین شرٹس کی قیادت اظہر علی کرینگے۔
آئی سی سی ٹیسٹ چیمپئن شپ کا حصہ ہونگے، آئی سی سی ٹیسٹ چیمپئن سپ کے ٹیبل پر سری لنکن ٹیم ایک میچ جیت کر 60 پوائنٹس کے ساتھ چوتھے نمبر پر ہے جبکہ پاکستان کی ٹیم تحال کوئی میچ نہیں جیت سکی اور نہ ہی پوائنٹس ٹیبل پر کوئی کھاتہ کھول سکی ہے۔ واضح رہے کہ دو ٹیسٹ میچوں پر مشتمل سیریز کا سیریز کا دوسرا ٹیسٹ 19 سے 23 دسمبر تک نیشنل کرکٹ سٹیڈیم کراچی میں کھیلا جائے گا۔
دیمتھ کرونارتنے سری لنکن ٹیم کی قیادت کرینگے جبکہ دیگر کھلاڑیوں میں انجیلو میتھیوز، چندیمل، کوسال پریرا، نیروزن ڈکویلا، سنداکان، کاسون راجتھا، وشوا فرنینڈو، لاہیرو کمارا، لاستھ ایمبولدینیا، دلروان پریرا، دھنجایا ڈی سلوا، لاہیرو تھریمانے اور اوشاندہ فرنینڈو شامل ہیں۔ دونوں ٹیموں کے درمیان ابتدائی ٹیسٹ کی ٹکٹوں کی آن لائن فروخت کا سلسلہ بھی جاری ہے، سیریز کے لئے ٹکٹوں کی مالیت صرف پچاس روپے مقرر کی گئی ہے، پی سی بی نے ملک میں 10 سال بعد طویل فارمیٹ کے کھیل کی واپسی پر جاوید میانداد اور بندولاورناپورا کو بطور مہمان خصوصی راولپنڈی ٹیسٹ میں شرکت کی دعوت دی ہے ۔
پاکستان کرکٹ بورڈ نے یہ فیصلہ دونوں سابق کپتانوں کی کرکٹ کیلئے خدمات کو پیش نظر رکھتے ہوئے کیا ہے، ٹیسٹ کرکٹ کی تاریخ میں پاکستان اور سری لنکا کے درمیان پہلا میچ مارچ 1982 میں نیشنل کرکٹ سٹیڈیم کراچی میں کھیلا گیا تھا، میچ میں پاکستان کرکٹ ٹیم کی قیادت جاوید میانداد اور سری لنکن کرکٹ ٹیم کی قیادت بندولاورناپورا نے کی تھی، میچ میں پاکستان نے 204 رنز سے کامیابی حاصل کی تھی۔ جاوید میانداد اور بندولا ورناپورا دونوں ممالک کی ٹیموں کے درمیان (آج) بدھ سے شروع ہونے والے پہلے ٹیسٹ میچ سے قبل سیریز کی ٹرافی کے فوٹو شوٹ میں شرکت کریں گے۔ دونوں ٹیموں کے کپتانوں نے میچ میں کامیابی کے لئے بیانات دیئے ہیں اور توقع کی جارہی ہے کہ میچ سخت اور کانٹے دار ہوگا۔

تاریخ اشاعت : منگل 10 دسمبر 2019

Share On Whatsapp