دیامر بھاشا اورمہمند ڈیمز عملدآمد کیس سماعت لیےکے مقرر

سماعت 12 دسمبر کو ہوگی، نامزد جسٹس گلزار احمد پانچ رکنی بنچ کی سربراہی کرینگے

اسلام آباد : : دیامر بھاشا اورمہمند ڈیمز عملدآمد کیس سماعت لیےکے مقررہو گیا ہے۔ کیس کی سماعت 12 دسمبر کو ہوگی، نامزد جسٹس گلزار احمد بنچ کی سربراہی کرینگے۔تفصیلات ک مطابق جسٹس گلزار احمد کی سربراہی میں سپریم کورٹ کا پانچ رکنی بنچ دیامر بھا شااور مہمند ڈیمز کی تعمیر کے لئے قائم عملدرآمد کمیٹی کی سفارشات کے حوالے سے 12 دسمبر کو سماعت کرے گا۔
اس کیس کی سماعت کے لیے چیف جسٹس گلزار احمد کی سربراہی میں سپریم کورٹ کا پانچ رکنی بنچ تشکیل دے دیا گیا ہے۔ سپریم کورٹ کے ججز جسٹس عمر عطاء بندیال، جسٹس فیصل عرب، جسٹس اعجاز الاحسن اور جسٹس منیب اختر بنچ میں شریک ہونگے۔ کیس کی سماعت کے حوالے سے چیئرمین واپڈا خصوصی طور پر آج سپریم کورٹ میں موجود تھے۔ سپریم کورٹ نے ‘ دیا مر بھاشا اور مہمند ڈیم فنڈز2018” قائم کیا ہوا ہے جس میں لاکھوں افراد نے پیسے جمع کرائے ہوئےہیں۔
گلگت بلتستان کے ضلع دیامر میں تعمیر کیا جانے والا دیامر بھاشا ڈیم کے منصوبے پر 14 ارب روپے لاگت آنے کابتایا گیا ہے جس سے 45 سو میگاواٹ بجلی پیدا کی جا سکتی ہے۔ ڈیم کا پانی آبپاشی اور پینے کے لیے بھی استعمال ہو سکتا ہے۔ دریائے سوات پر تعمیر ہونے والا مہمند ڈیم ہائیڈرو پاور منصوبے سے یومیہ 800 میگاواٹ بجلی پیدا کی جا سکے گی اور اس کی تعمیر پر تین ارب ڈالر لاگت ّآئے گی۔ مہمند ڈیم پر کام 2024 تک مکمل ہوجائیگا۔ ملک تیزی کےساتھ خشک سالی کا شکار ہو رہا ہے اور اگر فوری طور پر ڈیمز کی تعمیر اور پانی کے مسئلے پر توجہ نہ دی جائے تو مملکت خداد خشک سالی سے دوچار ہوجائے گی اور ہمارے کھیت بہت جلد پنجر ہو جائینگے۔

تاریخ اشاعت : منگل 10 دسمبر 2019

Share On Whatsapp