خسرو بختیار کو پیٹرولیم کی وزارت دینے کا فیصلہ واپس لے لیا گیا

سابق وزیر برائے منصوبہ بندی کو اب وزارت نیشنل فوڈ اینڈ سیکیورٹی کا قلم دان دے دیا گیا

اسلام آباد : خسرو بختیار کو پیٹرولیم کی وزارت دینے کا فیصلہ واپس لے لیا گیا، سابق وزیر برائے منصوبہ بندی کو اب وزارت نیشنل فوڈ اینڈ سیکیورٹی کا قلم دان دے دیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق کابینہ میں ردوبدل کے حوالے سے وفاقی کابینہ ڈویژن نے نوٹی فکیشن جاری کردیے ہیں، اسد عمر کو منصوبہ بندی و ترقی اور اصلاحات کےوفاقی وزیر کا قلم دان دےدیا گیا ہے۔
تاہم گزشتہ روز کے اعلان کے مطابق سابق وزیر برائے منصوبہ بندی خسرو بختیار کو پیٹرولیم کی وزارت نہیں مل سکی۔ وفاقی کابینہ ڈویژن کی جانب سے جاری کردہ نوٹی فکیشن کے مطابق خسرو بختیار کو پیٹرولیم کی بجائے وزارت نیشنل فوڈ اینڈ سیکیورٹی کا قلم دان دے دیا گیا ہے۔ واضح رہے کہ گزشتہ روز مشیر اطلاعات نے اعلان کیا تھا کہ وزیراعظم عمران خان نے وفاقی کابینہ میں توسیع اور ردوبدل کا فیصلہ کرلیا ہے جس کے مطابق اسد عمر کو منصوبہ بندی کی وزارت دی جائیگی جبکہ خسروبختیار کو وزیر پٹرولیم کی وزارت سونپی جائیگی۔
پیر کو معاون خصوصی برائے اطلاعات ونشریات فردوس عاشق اعوان نے ٹوئٹر پر اپنے بیان میں وفاقی کابینہ میں توسیع اور ردوبدل کے فیصلے کے تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ اسد عمرکو منصوبہ بندی اور سپیشل انیشیٹو جبکہ خسرو بختیار کو پٹرولیم کا وفاقی وزیر بنایا جائیگا۔ انہوں نے بتایا کہ اس حوالے سے جلد نوٹیفکیشن جاری کردیا جائیگا ۔ یاد رہے کہ اسد عمر تحریک انصاف کی حکومت آنے کے بعد وزارت خزانہ کے وزیر تھے تاہم بعد میں انہوں نے وزارت سے استعفی دیدیا تھا اورفوری طورپر وزارت نہ لینے کا اعلان کیا تھا۔ بعد ازاں وزیراعظم عمران خان اور دیگر وفاقی وزراء نے اسد عمر سے ملاقاتیں کیں اور انہیں وزارت کی پیشکش کی جسے اب اسد عمر نے قبول کرتے ہوئے وزارت لینے کا فیصلہ کیا ہے۔

تاریخ اشاعت : منگل 19 نومبر 2019

Share On Whatsapp