Playing With Players Who Were Involved In Wrong Activities: Mohammad Hafeez
Trying To Raise Voice Against These Players Has Been Urged To Remain Silent: National All-Rounder

ایسے پلیئرز کے ساتھ کھیلنا پڑا جو غلط سرگرمیوں میں حصہ ڈال رہے تھے:محمد حفیظ

ان کھلاڑیوں کیخلاف آواز اٹھانے کی کوشش کی تو خاموش رہنے کی تلقین کی گئی،قومی آل راﺅنڈر

لاہور : قومی کرکٹ ٹیم کے آل راﺅنڈر محمد حفیظ نے بھی غلط کاموں میں ملوث افراد کی نشاندہی کرتے ہوئے کہا ہے کہ انہیں ایسے پلیئرز کے ساتھ کھیلنا پڑا جو غلط سرگرمیوں میں حصہ ڈال رہے تھے مگر جب انہوں نے ایسے کرداروں کیخلاف آواز اٹھانے کی کوشش کی تو انہیں خاموش رہنے کی تلقین کی گئی۔محمد حفیظ نے شعیب اختر کے یو ٹیوب چینل پر گفتگو کے دوران انکشاف کیا کہ مذکورہ کھلاڑی ان کے بھائیوں کی طرح ہیں جن کیلئے محض دعا ہی کی جا سکتی ہے مگر جو کچھ انہوں نے کیا وہ اس کے شدید مخالف تھے اور جب انہوں نے اس سلسلے میں آواز اٹھانے کی کوشش کی تو انہیں بتا دیا گیا کہ اگر پاکستان کیلئے مزید کھیلنے کی امید ہے تو خاموشی اختیار کرو اور چونکہ انہیں اپنا کیریئر عزیز تھا لہٰذا انہوں نے ایسا ہی کیا کیونکہ وہ اپنی مثبت توانائی پاکستان کیلئے استعمال کرنا چاہتے تھے۔
محمد حفیظ نے تسلیم کیا کہ وہ ان کھلاڑیوں کے ساتھ کھیلتے رہے جو سراسر غلط اقدام تھا کیونکہ اس سے پاکستان کرکٹ کو کوئی فائدہ نہیں پہنچا اور نہ ہی ان کھلاڑیوں کو واپس لانے سے جو غلط کاموں میں ملوث تھے۔یاد رہے کہ اس سے قبل سابق فاسٹ باﺅلر شعیب اختر بھی یہ دعویٰ کر چکے ہیں کہ انہیں اپنے کیریئر کے دوران اکثر 21 مخالف افراد کا سامنا کرنا پڑا جو صرف مخالف سائیڈ میں ہی نہیں بلکہ ان کی اپنی ٹیم میں بھی موجود تھے۔راولپنڈی ایکسپریس نے اپنے بیان میں صاف الفاظ میں کہا تھا کہ وہ پاکستانی ٹیم میں کھیلتے ہوئے میچ فکسرز کے درمیان گھرے ہوئے تھے۔

تاریخ اشاعت : پیر 18 نومبر 2019

Share On Whatsapp