چودھری برادران تو آزادی مارچ کی کامیابی پر مجھے مبارکباد دینے آئے تھے: مولانا فضل الرحمان

چودھری برادران نے ہمیں حکومت کی طرف سے انہیں کوئی پیغام نہیں دیا، مولانا فضل الرحمان نے حامد میر کے پروگرام میں سب بتا دیا

اسلام آباد ۔ : جمیعتِ علماء اسلام ف کے امیر مولانا فضل الرحمان نے آج چوہدری برادران سے ملاقات کے بعد سینئیر صحافی حماد میر کے پروگرام میں گفتگو کی جس کے حوالے سے حماد میر نے انکشاف کیا ہے کہ مولانا نے انہیں بتایا کہ چودھری برادران تو آزادی مارچ کی کامیابی پر انہیں مبارکباد دینے آئے تھے اور چودھری برادران نے انکو حکومت کی طرف سے انہیں کوئی پیغام نہیں دیا۔
 
واضح رہے کہ آج جمعیت علماء اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان سے چوہدری شجاعت حسین اور چوہدری پرویز الہیٰ نے ملاقات کی، یہ ملاقات سینیٹر طلحہ محمود کی رہائش گا ہ پر ہوئی، اس موقع پر میڈیا سے مشترکہ طور پر گفتگو کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ ملکی تاریخ کا سب سے بڑا مارچ اور دھرنا ہم نے کیا، ہم ابھی تک احتجاج میں ہیں، ملک بھر میں کارکنان کو مسافروں، ایمبولنسوں کو راستہ دینے کا کہا ہے، معاملہ کو تشدد کی طرف نہ لے کر جایا جائے، انتظامیہ بھی احتیاط سے کام لے، احتجاج ہمارا حق ہے، خواہش ہے کہ ملک جمہوری طور پر آگے بڑھے، مسلم لیگ (ق) کے رہنما و سپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الہٰی نے کہا کہ مولانا فضل الرحمن کی قیادت میں ثابت ہو گیا کہ اسمبلی کے اندر اور باہر وہ واحد اپوزیشن لیڈر ہیں، مولانا کی قیادت کو مان گئے ہیں، مسلم لیگ (ق) کے چوہدری شجاعت حسین نے کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان کو اپنے عہدے کے مطابق بڑا دل رکھ کر نوازشریف کو بغیر کسی شرط کے بیرون ملک علاج کیلئے بھیجنا چاہئے۔
اب مولانا نے بتایا ہے کہ چودھری برادران تو آزادی مارچ کی کامیابی پر انہیں مبارکباد دینے آئے تھے اور چودھری برادران نے انکو حکومت کی طرف سے انہیں کوئی پیغام نہیں دیا۔

تاریخ اشاعت : جمعرات 14 نومبر 2019

Share On Whatsapp