ڈی جی آئی ایس پی آر کا فیصلہ سازی کیلئے بھارت کو قائد اعظم کی تقلید کرنے کا مشورہ

اگرعقلمند بھارتی فیصلہ سازی کیلئے ان(قائد اعظم) کی پیروی کرنے لگیں تو کوئی نقصان نہیں ہوگا، کنہیں بہت دیر نہ ہو جائے: میجر جنرل آصف غفور کا اشوک سوائن کے ٹویٹ پر جواب

راولپنڈی : ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور نے فیصلہ سازی کیلئے بھارت کو قائد اعظم محمد علی جناح کی تقلید کرنے کا مشورہ دے دیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق آج کرتار پور راہداری کا افتتاح کیا گیا اور کرتار پور میں گوردوارے کے داخلی دروازے پر بانی پاکستان قائد اعظم محمد علی جناح کا ایک قول اٴْن کی تصویر کے ساتھ آویزاں کیا گیا ہے۔قائد اعظم کے آویزاں کیے گئے قول میں پاکستان میں برابری، امن، یکسانیت کا پیغام دیا گیا ہے۔
اس کے علاوہ اقلیتوں کو بغیر کسی ڈر اورخوف کے اپنی مذہبی رسومات ادا کرنے کی آزادی کی بھی بات کی گئی ہے۔ محمد علی جناح کے برسوں قبل کہے ہوئے قول پر پاکستان نے عمل کرتے ہوئے کرتارپور راہداری کا افتتاح کرنے کافیصلہ کیا ہے، پاکستان کی جانب سے اٴْٹھائے گئے اس اقدام نے دٴْنیا بھر کو یہ پیغام دے دیا ہے کہ یہ قائد کا پاکستان ہے، جہاں امن، یکسانیت، برابری اور اقلیتوں کو اٴْن کے حقوق دیے جاتے ہیں۔
گوردوارہ دربار صاحب میں آویزاں کیے گئے قائداعظم محمد علی جناح کے قول کے مطابق آپ آزاد ہیں، آپ اپنے مندروں میں جانے کیلئے آزاد ہیں،آپ اس ریاست پاکستان میں اپنی مساجد یا کسی اور عبادت گاہوں پر جانے کیلئے آزاد ہیں، آپ کا تعلق کسی بھی مذہب ، ذات یا مسلک سے ہولیکن اِس کا ریاست کے کاروبار سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ اس پر بھارتی صحافی اشوک سوائن نے ٹویٹ کیا کہ ’’کم از کم ایک ملک تو اپنے بانی کے قول پر عمل کررہا ہے‘‘۔
 
 اس پر ڈی جی آئی ایس پی آر نے جواب میں کہا کہ ’’ ہم بہت فخر سے ایسا کرتے ہیں، اگرعقلمند بھارتی فیصلہ سازی کیلئے ان(قائد اعظم) کی پیروی کرنے لگیں تو کوئی نقصان نہیں ہوگا، کنہیں بہت دیر نہ ہو جائے‘‘۔

تاریخ اشاعت : ہفتہ 9 نومبر 2019

Share On Whatsapp