بابری مسجد کیس کے فیصلے سے بھارت کا مکروہ چہرہ بے نقاب ہو گیا‘ فیاض الحسن چوہان

, نام نہاد سیکولرازم کے لبادے میں ایک فاشسٹ بھارتی ریاست چھپی ہے‘صوبائی وزیر کالونیز

لاہور : صوبائی وزیرِ کالونیز فیاض الحسن چوہان نے کہا ہے کہ بابری مسجد کیس کے فیصلے سے بھارت کا مکروہ چہرہ بے نقاب ہو گیا،حقیقت یہ ہے کہ دنیا کی سب سے بڑی جمہوری ریاست اور سیکولرازم کے لبادے میں ایک فاشسٹ بھارتی ریاست چھپی ہے۔ فیاض الحسن چوہان نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ آج ایک دفعہ پھر ثابت ہو گیا کہ دو قومی نظریہ بالکل صحیح تھا اور انگریزوں کے جانے کے بعد متحدہ ہندوستان میں مسلمانوں سمیت تمام اقلیتوں کا رہنا ناممکن تھا۔
بھارتی سپریم کورٹ کی جانب سے بابری مسجد کیس کے متعصبانہ فیصلے کے رد عمل میں فیاض الحسن چوہان نے کہا کہ انتہا پسند مودی سرکار نے تمام اقلیتوں پر زمین تنگ کر دی ہے جبکہ دوسری جانب پاکستان میں وزیراعظم عمران خان نے کرتار پور راہداری کے منصوبے کو پایہ تکمیل تک پہنچا کر دنیا کو واضح پیغام دیا ہے کہ پاکستان امن کا داعی اور اقلیتوں کے حقوق کا محافظ ہے۔
فیاض الحسن چوہان نے مزید کہا کہ کرتار پور راہداری کے قیام سے عمران خان نے دنیا بھر کے سکھوں کے دل جیت لیے ہیں جبکہ مودی سرکار ریاستی اداروں کے ذریعے اقلیتوں پر ظلم کے پہاڑ توڑ رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ آج کا پاکستان خطے میں امن و محبت کا داعی ہے۔پی ٹی آئی اور مودی سرکار کے اقلیتوں سے سلوک میں زمین آسمان کا فرق ہے۔

تاریخ اشاعت : ہفتہ 9 نومبر 2019

Share On Whatsapp