کرتاپور راہداری کی تقریب میں وزیراعظم کے ساتھ موجود شخصیت پر سوالات اٹھنے لگے

وزیراعظم عمران خان کے ساتھ انیل مسرت کس حیثیت سے موجود ہیں؟ سینئیر صحافیوں نے بھی سوالات اٹھا دئیے

کرتاپور : کرتاپور راہداری کی تقریب میں وزیراعظم کے ساتھ موجود شخصیت پر سوالات اٹھنے لگے۔تفصیلات کے مطابق آج کرتاپور راہدری کا افتتاح کیا جا رہا ہے ۔وزیراعظم عمران خان سمیت کئی اہم شخصیات افتتاحی تقریب میں موجود ہیں۔سابق بھارتی وزیراعظم منموہن سنگھ اور نوجوت سنگھ سدھو بھی تقریب میں موجود ہیں۔وزیراعظم عمران خان کے ہمراہ عثمان ڈار اور انیل مسرت بھی موجود ہیں۔
یہاں پر کچھ صحافیوں نے وزیراعظم عمران خان کے ساتھ انیل مسرت کی موجودگی پر سوالات اٹھائے ہیں۔سینئیر صحافی سلیم صافی نے ٹویٹ کیا کہ کرتارپور میں بھی انیل مسرت۔۔۔ کیا نئے پاکستان میں کوئی ایک کام بھی ان کے بغیر ہوسکتا ہے؟
ایک صارف نے ٹویٹ کیا کہ
سینئیر صحافی نے ٹویٹ کیا کہ
۔
خیال رہے کہ وزیراعظم عمران خان گوردوارہ صاحب کرتار پور اور راہداری کے افتتاح کیلئے شٹل بس سروس کے ذریعے گوردوارہ کرتارپور کمپلیکس پہنچے۔ ہفتہ کو کرتارپور راہداری کے افتتاح کے حوالے سے وزیراعظم عمران خان نے کرتارپور کا دورہ کیا۔ اس موقع پر وہ سکھ یاتریوں کے لئے شروع کی گئی شٹل بس سروس کے ذریعے کمپلیکس تک پہنچے۔ اس موقع پر بڑی تعداد میں سکھ یاتری ان کے استقبال کیلئے موجود تھے۔
وزیراعظم نے بھی سکھ یاتریوں کا خیرمقدم کیا۔جب کہ عمران خان نے کہاکہ بابا گرونانک دیوجی کے 550ویں جنم دن کے موقع پر سکھ برادری کے لیے راہداری کے افتتاح کی اہمیت مسلمان اپنے مذہبی مقامات کے تقدس کے حوالے سے بخوبی سمجھتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ کرتارپور راہداری کا افتتاح اس حقیقت کا عکاس ہے کہ مختلف مذاہب کے پیروکاروں کے لیے ہمارے دل ہمیشہ کھلے ہیں جس کا حکم ہمارے مذہب نے دیا اور جس کاتصوربابائے قوم نے پیش کیا تھا۔ وزیراعظم نے کہاکہ آج ہم محض سرحدہی نہیں بلکہ سکھ برادری کے لیے اپنے دلوں کو بھی کھول رہے ہیں۔

تاریخ اشاعت : ہفتہ 9 نومبر 2019

Share On Whatsapp