معروف صحافی کی چڑیا نے حکومت کے جانے کے حوالے سے اہم خبر دے دی

نجم سیٹھی نے کہا ہے کہ ہو سکتا ہے ان کے خلاف کسی کیس میں الیکشن کمیشن یا عدالتیں انہیں ڈس کوالیفائی کر دیں

لاہور : سینیئر صحافی و تجزیہ کارنجم سیٹھی نے حکومت کے خاتمے کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ موجودہ حکومت کی کسی کیس میں ڈس کوالیفیکشن کے باعث چھُٹی ہو سکتی ہے۔ ماضی میں صوبہ پنجاب کے نگران وزیر اعلیٰ اور پی سی بی کے چیئرمین کی ذمہ داریاں نبھانے والے نجم سیٹھی جو انکشافات کے حوالے سے اپنے ذرائع کو ’چڑیا‘ کا نام دیتے ہیں۔ اُنہوں نے اپنے سوشل میڈیا چینل میں گفتگو کے دوران کہا کہ حکومت کے جانے کا ایک اور طریقہ بھی ہے جس سے ان کی چھٹی ہو سکتی ہے اور وہ یہ ہے کہ ڈس کوالیفیکیشن ہو جائے ان کی کسی کیس میں۔
کوئی ایسی چیز سامنے آ جائے کسی کیس میں، جس کے نتیجے میں الیکشن کمیشن یا عدالتیں انہیں ڈس کوالیفائی کر دیں۔ کیونکہ اگر ایک اقامہ پر ایک وزیر اعظم کو ڈس کوالیفائی کیا جا سکتا ہے۔ تو جب وقت آتا ہے تو بہت سی چیزیں مِل سکتی ہیں۔ واضح رہے کہ ایک اور معروف صحافی نے تجزیہ کار رانا عظیم نے ایک بڑا چونکا دینے والا دعویٰ کیا ہے۔ ایک نجی ٹی وی چینل سے گفتگو کے دوران انہوں نے دعویٰ کیا ہے کہ عمران خان کو بچانے کے لیے مستقبل قریب میں عثمان بزدار یا محمود خان کی قربانی دی جا سکتی ہے۔
اس کے علاوہ ایک وفاقی وزیر بھی اپنی نشست سے ہاتھ دھو سکتا ہے۔ رانا عظیم نے کہا کہ اس دھرنے کے نتیجے میں کچھ قربانیاں ہوں گی۔ دھرنے والوں کے مطالبات منظور ہوں یا نہ ہوں۔ وزیر اعظم کہیں نہیں جا رہے۔تاہم ان دھرنوں کے نتیجے میں پنجاب یا خیبر پختونخوا کے وزرائے اعلیٰ میں سے کسی ایک کو ہٹایا جا سکتا ہے۔ قربانی کے حوالے سے ان کے نام گردش کر رہے ہیں۔ ہو سکتا ہے کہ یہ فوری نہ ہو، تاہم دھرنے کے اثرات ختم ہونے سے پہلے پہلے یہ بڑی تبدیلیاں متوقع ہیں۔ جبکہ ذرائع نے بھی اس بات کی تصدیق کی ہے کہ ایک تبدیلی وفاق میں بھی متوقع ہے۔ جو کہ ایک وفاقی وزیر ہے۔

تاریخ اشاعت : ہفتہ 9 نومبر 2019

Share On Whatsapp