کھیئل داس کوہستانی کا بابا گرونانک کی سالگرہ پرعام تعطیل کرنےکا مطالبہ

عام تعطیل کیلئے قومی اسمبلی میں قرارداد جمع، آرٹیکل36 میں اقلیتوں کومکمل حقوق حاصل ہیں، قرارداد کا متن، ڈپٹی کمشنر نارووال کا کل کرتارپورراہداری کی افتتاحی تقریب کے موقع پرعام تعطیل کا اعلان

اسلام آباد : مسلم لیگ ن کے رکن قومی اسمبلی کھیئل داس کوہستانی نے بابا گرونانک کی 550 ویں سالگرہ کے موقع پرعام تعطیل کا مطالبہ کردیا۔ انہوں نے قومی اسمبلی میں عام تعطیل کیلئے قرارداد بھی جمع کرا دی ہے، آرٹیکل 36 میں اقلیتوں کو مکمل حقوق حاصل ہیں۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق اقلیتی رکن قومی اسمبلی کھیئل داس کوہستانی نےعام تعطیل کے لیے قومی اسمبلی میں قرارداد جمع کرا دی ہے۔
جس میں بابا گرونانک کی 550 ویں سالگرہ کے موقع پرعام تعطیل کا مطالبہ کیا گیا ہے۔ قرار داد کے متن میں کہا گیا کہ آرٹیکل 36 میں اقلیتوں کو مکمل حقوق حاصل ہیں۔ آرٹیکل 20 میں اقلیتوں کومکمل مذہبی آزادی حاصل ہے۔ بانی پاکستان محمد علی جناح نے بھی کہا کہ اقلیتوں کو برابری کے حقوق حاصل ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں دنیا بھرسے بڑی تعداد میں سکھ یاتری آتے ہیں۔
بھارت، کینیڈا، ملائیشیا، امریکا اور دیگرممالک سے سکھ یاتریوں نے پاکستان آنا ہوتا ہے۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ حکومت پاکستان بابا گرونانک کے جنم دن پرعام تعطیل کا اعلان کرے۔ دوسری جانب ڈپٹی کمشنر نارووال نے کل 9 نومبر بروز ہفتے کو کرتارپورراہداری کی افتتاحی تقریب کے موقع پر ضلع بھرمیں عام تعطیل کا اعلان کردیا ہے۔ ضلعی انتظامیہ نے عام تعطیل کا نوٹیفکیشن بھی جاری کردیا ہے۔
واضح رہے وزیراعظم عمران خان کل ہفتہ 9 نومبر کو کرتار پور راہداری کا افتتاح کریں گے۔ جس کے لیے تمام تیاریاں مکمل کر لی گئی ہیں۔ بھارت کی جانب سے سابق وزیراعظم من موہن سنگھ اور سیاسی و سماجی رہنما نوجوت سنگھ سدھو کی شمولیت بھی متوقع ہے، افتتاحی تقریب کے دعوت نامے سفارتکاروں اور دیگر اہم شخصیات کو بھجوائے گئے ہیں۔ معززین کیلئے ساٹھ فٹ لمبا اور چوبیس فٹ چوڑا اسٹیج تیار کیا گیا جبکہ شرکاء کے لیے پنڈال میں چھ ہزار کرسیاں، ساؤنڈ سسٹم اور اسکرینیں لگائی گئی ہیں۔ بارش کے پیش نظر پنڈال کو واٹر پروف بنایا گیا۔ بابا گرونانک کی550 ویں جنم دن میں شرکت کیلئے مختلف ممالک میں پاکستانی سفارتخانوں نے سکھ یاتریوں کو ویزے بھی جاری کر دیئے ہیں۔

تاریخ اشاعت : جمعہ 8 نومبر 2019

Share On Whatsapp