رہنما مسلم لیگ ن کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کو گرفتار کر لیا گیا

مریم نواز کے شوہر کو اشتعال انگیز تقاریر کرنے پر لاہور کے علاقے راوی ٹول پلازہ سے گرفتار کیا گیا

لاہور : رہنما مسلم لیگ ن کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کو گرفتار کر لیا گیا، مریم نواز کے شوہر کو اشتعال انگیز تقاریر کرنے پر لاہور کے علاقے راوی ٹول پلازہ سے گرفتار کیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ ن کے رہنما اور سابق وزیراعظم نواز شریف کے داماد کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔ بتایا گیا ہے کہ کیپٹن ریٹائرڈ صفدر نواز شریف کی طبیعت ناساز ہو جانے کی خبر سن کر لاہور آ رہے تھے۔
کیپٹن ریٹائرڈ صفدر نے نواز شریف کو ہسپتال منتقل کیے جانے کے باوجود اشتعال انگیز تقاریر کیں اور کارکنوں کو بھڑکانے کی کوشش کی۔ اشتعال انگیز تقاریر کرنے پر پولیس نے فوری حرکت میں آتے ہوئے کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کو گرفتار کر لیا۔ پولیس نے کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کو گرفتار کرنے کے نامعلوم مقام پر منتقل کر دیا ہے۔ محمد صفدر کو لاہور کے علاقے راوی ٹول پلازہ سے گرفتار کیا گیا۔
جبکہ دوسری جانب نواز شریف کو سروسز ہسپتال میں منتقل کیے جانے کے باوجود ن لیگ کے کارکنوں کی جانب سے لاہور کے مختلف مقامات پر احتجاج کیا جا رہا ہے اور ٹائر جلا کر راستے بلاک کر دیے گئے ہیں۔ دوسری جانب نواز شریف کی تازہ ترین میڈیکل رپورٹ آنے کے بعد نیب نے انہیں فوری بنیادوں پر علاج کیلئے ہسپتال منتقل کرنے کا فیصلہ کیا۔ بتایا گیا ہے کہ نیب نے نواز شریف کو لاہور کے سروسز ہسپتال میں علاج کیلئے منتقل کر دیا ہے۔
سروسز ہسپتال میں نواز شریف کے مزید ٹیسٹ کیے جائیں گے۔نواز شریف کیلئے تشکیل دیے گئے میڈیکل بورڈ کے ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ سابق وزیراعظم کے پلیٹ لیٹس کاونٹس کی کمی کی کئی وجوہات ہو سکتی ہیں۔ ان وجوہات میں ڈینگی کا مرض لاحق ہونا یا ادویات کا زیادہ استعمال بھی ہو سکتا ہے۔ ڈاکٹرز کی جانب سے کہا گیا ہے کہ نواز شریف کے مزید میڈیکل ٹیسٹس کیے جانے کے بعد ہی واضح ہوگا کہ ان کے پلیٹ لیٹس کس وجہ سے کمی کا شکار ہوئے ہیں۔
مزید بتایا گیا ہے کہ رپورٹ کے مطابق نوازشریف کا پلیٹلیٹ کاؤنٹ 16 ہزار آ رہا ہے۔ نواز شریف کی صحت کا جائزہ لینے کیلئے سروسز ہسپتال کے سینئر ڈاکٹرز پر مشتمل ایک میڈیکل بورڈ بھی تشکیل دے دیا گیا ہے۔ دوسری جانب صدر مسلم لیگ ن شہباز شریف نے نواز شریف کی حالت بگڑنے پر شدید تحفظات کا اظہار کیا ہے اور حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ سابق وزیراعظم کو علاج کی مکمل سہولیات فراہم کی جائیں۔ جبکہ نواز شریف کی حالت بگڑنے پر مسلم لیگ ن کے کارکنوں کی جانب سے لاہور کی ملتان روڈ پر احتجاجی مظاہرہ کیا جا رہا ہے۔

تاریخ اشاعت : منگل 22 اکتوبر 2019

Share On Whatsapp