پاکستانی جنگی طیاروں نے بھارتی طیارے کو گھیرے میں لے کر بھارت کے اوسان خطا کر دیے

بھارتی سول ایوی ایشن ادارے کے مطابق گزشتہ نئی دہلی سے کابل جانے والے بھارتی فضائیہ کے طیارے کو غلطی فہمی کی بنا پر پاکستانی طیاروں نے گھیر لیا تھا، تاہم بعد ازاں طیارے کو منزل کی جانب گامزن ہونے کی اجازت دے دی گئی تھی

لاہور : پاکستانی جنگی طیاروں نے بھارتی طیارے کو گھیرے میں لے کر بھارت کے اوسان خطا کر دیے، بھارتی سول ایوی ایشن ادارے کے مطابق گزشتہ نئی دہلی سے کابل جانے والے بھارتی فضائیہ کے طیارے کو غلطی فہمی کی بنا پر پاکستانی طیاروں نے گھیر لیا تھا، تاہم بعد ازاں طیارے کو منزل کی جانب گامزن ہونے کی اجازت دے دی گئی تھی۔ تفصیلات کے مطابق بھارتی میڈیا کی جانب سے دعویٰ کیا گیا ہے کہ گزشتہ ماہ بھارتی دارالحکومت نئی دلی سے افغان دارالحکومت کابل جانے والے ایک بھارتی مسافر طیارے کو پاکستانی ایف 16 طیاروں نے اپنی فضا میں گھیر لیا تھا۔
اس حوالے سے بھارتی سول ایوی ایشن ادارے کا کہنا ہے کہ یہ تمام معاملہ غلطی فہمی کی وجہ سے پیش آیا تھا۔ بھارت کا دعویٰ ہے کہ گزشتہ ماہ 23 ستمبر کو نئی دلی سے کابل جانے والے بھارتی ائیرلائن کے طیارے کو اس وقت پاکستان کے ایف 16 طیاروں نے گھیرے میں لے لیا تھا جب وہ پاکستان کی حدود سے گزر رہا تھا۔ تاہم اس موقع پر جب بھارتی مسافر جہاز کے پائلٹ نے پاکستانی جنگی طیاروں کے پائلٹس سے رابطہ کرکے انہیں کمرشل فلائٹ ہونے اور اپنی منزل کی تفصیلات سے متعلق آگاہ کیا تو پھر پاکستانی جنگی طیاروں کی جانب سے بھارتی طیارے کو کابل تک جانے کی اجازت دی گئی۔
تاہم پاکستانی ایف 16 طیاروں نے پھر بھی بھارتی طیارے کو افغان حدود میں داخل ہونے تک گھیرے میں لیے رکھا۔ بھارتی سول ایوی ایشن اتھارٹی کے حکام نے معاملے کی حساس نوعیت کے باعث اس کی مزید تفصیلات بتانے سے گریز کیا ہے، تاہم بھارتی میڈیا اس انکشاف کے بعد سے پاگل ہو کر مسلسل پاکستان کیخلاف زہر اگل رہا ہے۔ واضح رہے کہ رواں برس فروری کے ماہ میں پاکستان اور بھارت کی فضائیہ کے درمیان ہونے والی جھڑپوں کے بعد پاکستان نے بھارت کیلئے اپنی فضائی حدود بند کر دی تھی۔
کئی ماہ کی بندش کے بعد پاکستان نے بھارت کیلئے اپنی فضائی حدود دوبارہ کھول دی تھی۔ تاہم اگست کے ماہ میں مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کیے جانے کے بعد پاکستان نے بھارتی وزیراعظم اور صدر کو پاکستانی فضائی حدود کے استعمال کی اجازت دینے سے انکار کر دیا تھا۔

تاریخ اشاعت : جمعرات 17 اکتوبر 2019

Share On Whatsapp