Chechen Man Forced To Issue Public Apology For Crying At Sister’s Wedding

بہن کی شادی پر رونے والے بھائی کو ملک کے صدر اور عوام سے معافی مانگنا پڑ گئی


Warning: call_user_func_array() expects parameter 1 to be a valid callback, function 'show_embed_instagram' not found or invalid function name in /home/urduquick/public_html/functions.php on line 87
چیچنیا کے لوگ خود کو دنیا میں سب سے زیادہ جوانمرد  سمجھتے ہیں۔ اس تاثر کو قائم  رکھنےکے لیے چیچنیا کے  حکام بھی کافی کوشش کرتے ہیں۔
حال ہی میں  اس حوالے سے چیچنیا میں ایک دلچسپ واقعہ پیش آیا۔ بہن کی شادی کے دوران جب ایک نوجوان رونے لگا تو  پوری چیچن قوم اس کے پیچھے پڑ گئی اور اسے سب سے معافی مانگنا پڑی۔
تاریخ دان زیلیم خان سوسایف کا کہنا ہے کہ  چیچن شادیوں میں جذبات  کا اظہار شدید معیوب سمجھا جاتا ہے۔
ایسے میں بہن کی شادی میں  ایک نوجوان  کی  آنسو بہاتے ہوئے ویڈیو وائرل ہوئی تو   اس پر عوام کا شدید رد عمل آیا۔ عوام نے نوجوان پر اس طرح رونے کی وجہ سے کافی تنقید کی۔
حد تو یہ ہے کہ چیچنیا کے صدر رمضان قدیروف  نے بھی  ملکی روایات  کی خلاف ورزی پر  اس نوجوان پر شدید تنقید کی ۔ رمضان قدیروف نے  ”مجرم“ کو شناخت کرنے اور اسے عوام سے معافی مانگنے پر مجبور کرنے کا کہا۔
اس چیچن نوجوان، جسے  چیچن روایات کے مطابق اپنی بہن کی شادی پر موجود بھی نہیں ہونا چاہیے تھا، کو اب رمضان قدیروف  سے معافی مانگنا پڑی ہے۔  معافی مانگنے کی اس ویڈیو کو بعد میں سوشل میڈیا  پر بھی شیئر کیا گیا۔
ویڈیو میں ”مجرم“ نے  عوامی مقامات پر چیچن روایات کی خلاف ورزی پر معافی مانگی۔ ”مجرم“ نے  عوام سے کہا کہ انہوں نے اپنی بہن کی شادی میں شرکت کر کے اور پھر آنسو بہا کر ملکی روایات کو توڑا ہے، جس کےلیے وہ معافی چاہتے ہیں۔
نوجوان نے ویڈیو میں وضاحت کی کہ وہ اپنی  بہن کی شادی پر خود پر قابو نہ رکھ سکے کیونکہ وہ اپنی بہن کو جانے نہیں دینا چاہتے تھے۔
چیچن عوام کا کہنا ہے کہ شادیوں پر رونے اور  بہنوں کی شادی میں   اس طرح شرکت کرنے کے ویڈیو کلپس ناقابل برداشت ہیں۔
بہت سے لوگوں کو خیال ہے کہ رمضان قدیروف اور دوسرے لوگوں نے اس  چھوٹی بات کو اچھال کر سیاسی پوائنٹ اسکورنگ کی ہے۔ بہت سے لوگوں نے  نوجوان کا مذاق اڑا کر اسے معافی مانگنے پر مجبور کرنے کی بھی مذمت کی ہے۔
یاد رہے کہ چیچنیا میں شادی کے دوران دلہن کے خاندان کی شرکت یا رونا غیر قانونی نہیں لیکن  یہ روایات کے خلاف ہے۔


تاریخ اشاعت : جمعرات 10 اکتوبر 2019

Chechen Man Forced To Issue Public Apology For Crying At Sister’s Wedding
Share On Whatsapp
سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں