مولانا فضل الرحمان کیلئے 15 لاکھ لوگوں کے ہمراہ اسلام آباد کی جانب مارچ کرنا بظاہر ناممکن

جے یو آئی ف کے ماتحت ملک بھر میں چلنے والے مدرسوں کے طلباء کی کل تعداد 13 ہزار کے قریب ہے، سیاسی کارکنوں کی تعداد بھی محض چند ہزار سے زیادہ نہیں

اسلام آباد : مولانا فضل الرحمان کیلئے 15 لاکھ لوگوں کے ہمراہ اسلام آباد کی جانب مارچ کرنا بظاہر ناممکن، جے یو آئی ف کے ماتحت ملک بھر میں چلنے والے مدرسوں کے طلباء کی کل تعداد 13 ہزار کے قریب ہے، سیاسی کارکنوں کی تعداد بھی محض چند ہزار سے زیادہ نہیں۔ تفصیلات کے مطابق ذرائع کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ مولانا فضل الرحمان کا دعویٰ ہے کہ وہ 15 لاکھ لوگوں کے ہمراہ آزادی مارچ کے سلسلے میں اسلام آباد پہنچیں گے۔
اس حوالے سے معلوم کرنے کی کوشش کی گئی کہ مولانا فضل الرحمان کا دعویٰ کس حد تک درست ہے۔ بتایا گیا ہے کہ مولانا فضل الرحمان کیلئے لاکھوں افراد لے کر اسلام آباد پہنچنا مشکل ہی نہیں بلکہ ناممکن ہے۔ مولانا فضل الرحمان کے ماتحت ملک بھر میں چلنے والے مدرسوں میں زیر تعلیم طلباء کی کل تعداد 13 ہزار کے قریب ہے۔ جبکہ جے یو آئی ف کے کارکنان کی تعداد بھی چند ہزار سے زیادہ نہیں۔
گزشتہ ایک سال کے دوران مولانا فضل الرحمان نے جو جلسے کیے، ان میں شرکاء کی زیاد تر تعداد کا تعلق مدرسوں میں زیر تعلیم طلباء سے تھا۔ اب جبکہ حکومت نے سختی سے اعلان کیا ہے کہ سیاسی مقاصد کیلئے کسی مدرسے کے طالب علم کو دھرنے یا مارچ میں شرکت نہیں کرنے دی جائے گی۔ یوں مولانا کیلئے اپنے دعوے کے مطابق لاکھوں لوگوں کے ہمراہ اسلام آباد پہنچنے کا دعویٰ بظاہر ناممکن ہی نظر آ رہا ہے۔
دوسری جانب جے یو آئی ف کا 27 اکتوبر کا اسلام آباد میں داخل نہ ہونے کا فیصلہ کیا ہے۔ مولانا فضل الرحمان نے کارکنان کو 31 اکتوبر سے قبل کسی صورت وفاقی دارالحکومت میں داخل نہ ہونے کی تلقین کر دی ہے۔ جمعیت علمائے اسلام ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کارکنان کو پرامن طور پر 27 اکتوبر کو اسلام آباد کا رخ کرنے کی ہدایت کردی۔ تاہم کارکنان کو ہدایت کی گئی ہے کہ 31 اکتوبر سے قبل اسلام آباد میں داخل نہ ہوں۔ جے یو آئی ف کی قیادت نے فیصلہ کیا ہے کہ وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں 31 اکتوبر کو داخل ہوا جائے گا۔ اس حوالے سے جماعت کے تمام کارکنان کو نئی حکمت عملی سے متعلق آگاہ کرتے ہوئے باقاعدہ ہدایات بھی جاری کر دی گئی ہیں۔

تاریخ اشاعت : جمعرات 10 اکتوبر 2019

Share On Whatsapp