کراچی شپ یارڈ میں پاک بحریہ کے لئے تعمیر کی جانے والی 16ٹن بولارڈ پُل پشر ٹگز کی اسٹیل کٹنگ کی تقریب

کراچی شپ یارڈ میں پاک بحریہ کیلئے تعمیر کیئے جانے والے پشر ٹگز کی سٹیل کٹنگ کی تقریب مورخہ ۱۰ اکتوبر ۲۰۱۹ء کومنعقد ہوئی۔ کمانڈر کوسٹ وائس ایڈمرل محمد فیاض جیلانی اس موقع پر مہمان خصوصی تھے


Warning: call_user_func_array() expects parameter 1 to be a valid callback, function 'show_art_pic' not found or invalid function name in /home/urduquick/public_html/functions.php on line 87
اسلام اباد : کراچی شپ یارڈ میں پاک بحریہ کیلئے تعمیر کیئے جانے والے پشر ٹگز کی سٹیل کٹنگ کی تقریب مورخہ ۱۰ اکتوبر ۲۰۱۹ء کومنعقد ہوئی۔ کمانڈر کوسٹ وائس ایڈمرل محمد فیاض جیلانی اس موقع پر مہمان خصوصی تھے ۔ تقریب میں حکومتی عہدیداران ، پاک بحریہ ، ،کراچی شپ یارڈ اور دیگر نجی اداروں کے اعلی حکام نے شرکت کی۔

    اس ٹگ کی مجموعی لمبائی ۲۱ میٹر جبکہ ہٹاؤ ۲۵۵ ٹن ہے۔
اس کی حد رفتار ۱۰ ناٹس ہے جبکہ اس میں دو ڈیزل انجن لگے ہیں۔ ٹگنگ کے امور کے انجام دہی کیلئے اس کے تمام اطراف میں مضبوط فینڈرنگ کا انتظام ہے۔ اس میں آبدوزوں کی محفوظ حرکات کیلئے پانی کی سطح کے نیچے بھی منفرد فینڈرنگ کا انتظام ہے۔
    تقریب سے خطاب کرتے ہوئے معزز مہمان خصوصی نے کہا کہ بلا شبہ یہ منصوبہ وزارت دفاعی پیداوار کا خود انحصاری کی پالیسی کے طرف ایک ٹھوس قدم ہے۔
انہوں نے پاک بحریہ اور کراچی شپ یارڈ کی جہاز سازی میں خود انحصاری کے حصول کیلئے گراں قدر کاوشوں کو سراہا۔ انہوں نے ماہی گیری کی صنعت پر خصوصی روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ کراچی شپ یارڈ میں ماہی گیری کیلئے جدید فشنگ ٹرالرز اور بوٹس تعمیر کرنے کی بھر پور صلاحیت موجود ہے اور صوبائی حکومتوں پر زور دیا کہ ملک کے واحد جہاز سازی کے ادارے کی خدمات حاصل کرتے ہوئے اس شعبہ کو ترقی دیں۔

    اس موقع پر ریئر ایڈمرل اطہر سلیم مینجنگ ڈائریکٹرکراچی شپ یارڈ نے اپنے استقبالیہ خطاب میں پاک بحریہ اور وزارت دفاعی پیداوار کے مسلسل تعاون کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے کہا کہ شپ یارڈ نے ماضی میں ۱۰ سے ۴۰ ٹن گنجائش کے ٹگزپہلے بھی تعمیر کرچکاہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ شپ یارڈ میں جہازوں کی مرمت اور جنرل انجینئرنگ کے شعبہ جات کے ساتھ جہاز سازی کے متعدد منصوبے جاری ہیں جن میں پاکستان میری ٹائم سیکیورٹی کا ۱۵۰۰ ٹن میری ٹائم پیٹرول ویسل، پاک بحریہ کیلئے میزائل بردار جہاز اور پاکستان کی بری افواج کیلئے برج ایرکشن بوٹس شامل ہیں جبکہ پاک بحریہ کیلئے ۴ جدید آبدوزوں اور ۲ ملجم کلاس کارویٹس جیسے عظیم منصوبوں کی تعمیر کی تیاریاں بھر پور انداز سے جاری ہیں۔
انہوں نے شپ یارڈ کے عزم کا اظہار کرتے ہوئے یہ یقین دلایا کہ قومی اہمیت کے حامل یہ منصوبے عالمی معیار کے مطابق بروقت پایہ تکمیل تک پہنچائے جائے گے۔

تاریخ اشاعت : جمعرات 10 اکتوبر 2019

Share On Whatsapp