وزیراعظم عمران خان کی قیادت میں بدلے ہوئے پاکستان میں کوئی مقدس گائے نہیں ہے ،

قانون بالادست اور افراد اداروں کے تابع ہیں، بدعنوانی، قومی سلامتی کو داغدار کرنے یا ملک کے امیج کو خراب کرنے والوں کے خلاف زیرو ٹالرنس ہے، وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کا دو روزہ قومی میڈیاکانفرنس2019 سے خطاب

اسلام آباد : وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان کی قیادت میں بدلے ہوئے پاکستان میں کوئی مقدس گائے نہیں ہے ،قانون بالادست اور افراد اداروں کے تابع ہیں، بدعنوانی، قومی سلامتی کو داغدار کرنے یا ملک کے امیج کو خراب کرنے والوں کے خلاف زیرو ٹالرنس ہے، سیاست اور حکومت بعد میں ہی"پاکستان فرسٹ" اولین ترجیح ہے،سابقہ اداروں میں جان بوجھ کر قوانین اور اداروں کے افراد کے تابع رکھا گیا ،اداروں کو یرغمال بنا کر انھیں کمزور کر کے گھر کی لونڈی بنایا گیا، کسی بھی مہذب جمہوری ملک میں ایسی مثال نہیں ملتی ،وزیراعظم عمران خان نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں کشمیریوں کا وکیل بن کر بھارتی مکروہ چہرہ بے نقاب کیا ہے ، کشمیر بنے گا پاکستان کے نعرے کو حقیقت میں بدلنے ،مقبوضہ کشمیر میں بھارتی ظلم ،بربریت ، ناانصافیوں ، زیادیتوں کے خاتمے ،اقوام متحدہ کی قرارداووں ،قوانین اور ضابطوں پر عمل درآمد تک پورا پاکستان کشمیر کی آواز بن کر چٹان کی طرح ڈٹا رہے گا ، حکومت نے میڈیا کو ریاست کا چوتھا ستون تسلیم کر لیا ہے ،ہمارا مذہب، ثقافت، تہذیب اور تمدن ہماری طاقت ہے،ہمیں اپنی سماجی، ثقافتی اقدار کو مدنظر رکھتے ہوئے میڈیا سافٹ پاور کو بطور طاقت استعمال کرنا ہے۔
وہ جمعرات کو نیشنل یونیورسٹی آف ماڈرن لینگوئجز(نمل) میں " 21ویں صدی میں میڈیا بطور نرم طاقت " کے عنوان سے دو روزہ قومی میڈیاکانفرنس2019 سے خطاب کر رہی تھیں ۔نمل یونیورسٹی کے پیٹرن انچیف میجر جنرل (ر) محمد جعفر ، شعبہ سوشل سائنسز پروفیسر ڈاکٹر شاہد صدیقی ،پروفیسر ڈاکٹر عبدالسراج ،یونیورسٹی کے شعہ ماس کمیونیکشن کے سربراہ پروفیسر ڈاکٹر خالد سلطان کے علاوہ مختلف یونیورسٹیوں کے ماہر ین اور مختلف شعبہ جات میں زیر تعلیم طلباء و طالبات کی کثیر تعداد موجود تھی ۔
تقریب سے خطاب کر تے ہوئے وزیراعظم کی معاون خصوصی ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ نوجوان ہمارا روشن مستقبل اور قیمتی اثاثہ ہیں ،نمل یونیورسٹی جیسے تعلیمی ادارے نوجوان نسل کی صلاحیتوں کو نکھارنے،یوتھ کو ففتھ جنریشن وار اورقومی مفادات کو لاحق چیلنجز سے نمٹنے کے لئے تیار کرنے اور نوجوان کی استعداد کار کو بڑھانے میں اہم کر دار ادا کر رہے ہیں ۔
انہوں نے کہا کہ دنیا میں کامیاب سفارتکاری کا موثر ذریعہ میڈیا کمیونیکشن ہے، موجودہ حکومت نے میڈیا کو باقاعدہ طور پر چوتھا ستون تسلیم کر لیا ہے ،چوتھا ستون دیگر ستونوں گہری نظر رکھنے کے ساتھ ساتھ حکومت کی کارکردگی کی تشخیص کا کردار بھی ادا کرتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ جہاں پر حکومت آئینی حدود سے تجاوز کرے یا اختیارات کا ناجائز استعمال کرے وہاں پر میڈیا اس کی نشاندہی یا حکومت کی راہنمائی کے لئے تعمیری تنقید کرے گا تو حکومت اس تناظر میں ضرور اصلاح کریگی یہ ایک مثبت اقدام تصور ہوگا اس کے ساتھ ساتھ میڈیا کا ایک ذمہ دارانہ کردار بھی ہے کہ حکومت پر ضرور تعمیری تنقید کرے لیکن ریاست کے ساتھ جڑے سلامتی اور سالمیت کو ضرور مد نظر رکھے ، ڈس انفارمیشن یا فیک نیوز جس میں یہ تاثر دینا کہ ملک یا ملک کے اہم ادارے تباہ ہونے والے ہیں ایسی چیزوں سے گریز کرنا چاہیے کیونکہ پاکستان نے دنیا میں امن کے قیام کے لئے بہت سی جانی اور مالی قربانیاں دیکر امن قائم کیا ہے ۔
، میڈیا ہی واحد ذریعہ ہے جو دنیا میں پاکستان سے متعلق تاثر اور حقیقت میں فاصلے ختم ،اسلام کے خلاف پراپیگنڈے کا منہ توڑ جواب دے سکتا ہے ،درحقیقت اسلام کی آئیڈیالوجی انسانیت کے ساتھ جڑی ہوئی ہے ،وہ مسلمان ہی نہیں جو انسانی حقوق کو نہ مانیں ،ہمارا دین حقوق اللہ اور حقوق العبار میں توازن پیدا کرتا ہے ،ہمارے رول ماڈل حضرت محمد ﷺ ہیں جو رحمت اللعالمین ہیں۔
انہوں نے کہا کہ حکومت آزادی اظہار رائے پر یقین رکھتی ہے،سوشل میڈیا کے ذریعے پیغام چند لمحوں میں دنیا تک پہنچایا جا سکتا ہے ،وزیراعظم کی جنرل اسمبلی میں تقریر نے دنیا میں بھونچال برپا کر دیا،وزیراعظم نے اسلام کا حقیقی چہرہ دنیا کے سامنے پیش کیا۔انہوں نے کہا کہ میڈیا نظریاتی سرحدوں کے امین کا کردار ادا کرتا ہے،میڈیا عام آدمی تک معلومات کی رسائی کا اہم ذریعہ ہے۔
انہوں نے کہاکہ بھارت نے 2ماہ سے زائد عرصے سے کشمیریوں کی زبان بندی کر رکھی ہے،دنیا سوشل میڈیا کے ذریعے بھارت کی ریاستی دہشتگردی کو جان رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ نوجوانوں کو چاہیے کہ اپنے قومی ہیروز کو اپنا رول ماڈل بنائیں، وزیراعظم نے یو این میں دنیا کو پیغام دیا کہ مسلمان صرف اللہ کو سپر پاور مانتے ہیں۔ڈاکٹرفردوس عاشق اعوان نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نوجوانوں کی صلاحیتوں پر یقین رکھتے ہیں،وزیراعظم یقین رکھتے ہیں کہ نوجوان نسل نے پاکستان کو بدلنا ہے۔
انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کی ہدایت پر میڈیا یونیورسٹی قائم کی جائے گی،میڈیا کی آزادی کے بغیر کسی قوم یا معاشرے کا تحفظ نہیں ہو سکتا۔نمل یونیوسٹی کے پیٹرن انچیف نے بتایا کہ یہ ادارہ 1969 میں سیٹلائیٹ ٹائوں راولپنڈی میں قائم ہوا ،1972میں اسلام منتقل اور 2000میں اسے یونیورسٹی کا درجہ دیا گیا ۔قومی زبان کے حوالے سے یہ پہلی یونیورسٹی ہے جہاں پر زبانوں سے متعلق تعلیم کے ساتھ ساتھ مختلف شعبہ جات میں ڈگری پروگرام بھی جاری ہیں اس وقت اسلام آباد کے مرکزی کیمپس میں 18ہزار طالبعلم زیر تعلیم ہیں ،یونیورسٹی کے کراچی ،حیدر آباد ،ملتان ،لاہور ،فیصل آباد ،پشاور، میانوالی ، کوئٹہ کے علاوہ گوادر میں بھی کیمپس قائم ہیں،یونیورسٹی اپنی ٹی وی چینل کھولنے کی خواہش رکھتی ہے اس پر باقاعدہ کام جاری ہے ۔

تاریخ اشاعت : جمعرات 10 اکتوبر 2019

Share On Whatsapp