T20 Series, Babar-e-Azam And Proud Times For Poor Farm Management
Poor Game Of Bowlers, Amir's 3 Matches In The Same Wicket

ٹی ٹونٹی سیریز، بابر اعظم اور فخر زمان کی ناقص فارم مینجمنٹ کیلئے درد سر

باﺅلرزکا بھی ناقص کھیل، عامرکی3میچزمیں اتنی ہی وکٹیں

لاہور : ٹی 20 سیریز کے 3 میچز میں پاکستانی ٹیم کی جانب سے صرف ایک ہی ففٹی سامنے آئی، بابر اعظم اور فخرزمان کا بیٹ خاموش رہا۔سری لنکا سے3 ٹی ٹونٹی میچز کی سیریز میں پاکستان کی پرفارمنس سپر فلاپ ثابت ہوئی، کوئی بھی کھلاڑی غیرمعمولی کارکردگی پیش نہ کرسکا، 3 میچز میں واحد ففٹی حارث سہیل نے بنائی، آخری میچ میں ملنے والے موقع سے فائدہ اٹھاکر انھوں نے 52 رنز بنائے، بابر اعظم توقعات پر پورا نہیں اترسکے، انھوں نے 3 میچز میں 14.33 کی معمولی اوسط سے صرف 43 رنز سکور کیے،سرفراز احمد چوتھے نمبر پر خاطر خواہ کارکردگی پیش نہیں کرپائے البتہ ان کے 3 میچز میں 22.33 کی اوسط سے بنائے گئے 67 رنز دوسرے کھلاڑیوں سے زائد ثابت ہوئے، عماد وسیم نے 19 کی ایوریج سے 57 رنز سکور کیے،افتخار احمد نے2 میچز موقع پاکر 42 رنز اتنی ہی اوسط سے اسکور کیے۔
سری لنکا سے ون ڈے سیریز میں بہتر پرفارم کرنےوالے اوپنر فخر زمان کو پہلے میچ میں آرام دیا گیا، واپسی پر دوسرے میچ میں انھوں نے 6 رنز بنائے جبکہ تیسرے میں گولڈن ڈک کا شکار ہوئے، ٹیم میں واپس لوٹنے والے احمد شہزاد نے 2 میچز میں 8.50 کی اوسط سے 17 رنز بنائے جبکہ عمر اکمل نے 2 میچز میں ایک بھی رن نہ بنایا۔باﺅلنگ میں محمد عامر نے 3 میچز میں اتنی ہی وکٹیں 30.66 کی اوسط سے 92 رنز دے کر حاصل کیں، محمد حسنین نے 3 وکٹیں 2 میچز میں اڑائیں، عماد وسیم، وہاب ریاض اور شاداب خان نے 2، 2 کھلاڑیوں کو آﺅٹ کیا۔

تاریخ اشاعت : جمعرات 10 اکتوبر 2019

Share On Whatsapp