حکومت مشاورت کرے معیشت دو سال میں بہتر ہو جائے گی

حکومت کو 6 پوائنٹس دئیے گئے اس پر عمل کیا جائے تو دو سال میں ہی معیشت بہتر ہونا شورع ہو جائے گی،حکومت ہمارے ساتھ بیٹھ کر مذاکرات کرے تو ہمارے پاس حل موجود ہے۔ تاجر رہنما

اسلام آباد : تاجر رہنما زبیر موتی والا نے کہا ہے کہ حکومت ہمارے ساتھ مشاورت کرے ملک کی معیشت دو سال میں بہتر ہو جائے گی کیونکہ معیشیت کو بہتر کرنے کا حل ہمارے پاس موجود ہے۔تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے رہنما عثمان ڈار کا کہنا ہے کہ ہم نے کئی بار تاجروں کو مذاکرات کی میز پر لانے کی کوشش کی ہے تاہم تاجربرادری کی ٹیکس کے حوالے سے دستاویزات مرتب کرنا چاہتے ہیں لیکن وہ اس کے لیے تیار نہیں ہیں۔
انہوں نے کہا کہ تاجر ٹیکس نہیں دیں گے تو یہ ملک آگے کیسے چلے گا۔ہم ٹیکس کو کمپیوٹرئزڈ کرنا چارہے ہیں۔ٹیکس حکومت تک پہنچے، ہم ٹیکس اپنی جیب میں نہیں ڈال رہے۔جب کہ تاجر رہنما زبیر موتی والا نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت بھی یہ نہیں کہہ رہی کہ معیشت بہت مضبوط ہے بلکہ وہ کہتے ہیں کہ ہم ایسی پالیسی لا رہے ہیں جس سے معیشت بہتر ہو جائے گی۔ہماری مارکیٹوں کا حال بہت خراب ہے،اتنی بری حالت پاکستان کی اس سے قبل کبھی نہیں ہوئی۔
انہوں نے کہا کہ ایکسپورٹ کو درست کرنے کی ضرورت ہے۔لوگوں کو ڈر ہے کہ سیلز ٹیکس کا ریفنڈ ہمیں نہیں ملے گا۔اور حکومت کو یہ عوام کو اعتماد دلانا پڑے گا۔انہوں نے کہا کہہ شناختی کارڈ کے مسئلے کو حکومت تاجروں کے ساتھ مل کر حل کرے معاملات ایسے نہیں چلیں گے۔تاجر رہنما نے کہا کہ ہم تو چاہتے ہیں کہ کرپشن کے پیسے واپس آئیں اگر آپ 17 فیصد کا سلیز ٹیکس لگا دیں گے تو ان کا کاروبار کیسے چلے گا،۔
،حکومت پوائنٹ آف سیل سے ٹیکس وصول کرنا چاہتے ہیں۔اگر حکومت ایسے چلتی رہی تو مستقبل انتہائی خطرناک ہو گا۔عمران خان کو تاجروں کی جانب سے جو 6پوائنٹس دئیے گئے اس پر عمل کیا جائے تو دو سال میں ہی معیشت بہتر ہونا شورع ہو جائے گی۔حکومت ہمارے ساتھ بیٹھ کر مذکارات کرے تو ہمارے پاس حل موجود ہے۔

تاریخ اشاعت : جمعرات 10 اکتوبر 2019

Share On Whatsapp