ٹوئٹر نے بھی صارفین سے معافی مانگ لی

فیس بک کے بعد ٹوئٹرنے بھی صارفین کا ڈیٹا بیچ دیا

لاہور ۔ :   غلطی تسلیم کر لینا بھی بڑی بات ہے لہٰذ ایہی سوچ کر شاید ٹوئٹر انتظامیہ نے بھی اپنے صارفین سے معافی مانگ لی،معافی مانگنے کی وجہ صارفین کا ڈیٹا ان کی مرضی ا ور خواہش کے بغیر کچھ کمپنیوں کو اشتہارات کے لیے بیچا گیا ہے۔نہ تو یہ واقعہ پہلی بار ہوا ہے اور نہ ہی ٹوئٹر پہلی سوشل میڈیا سائٹ ہے جس نے ایساکیا ہے اس سے قبل فیس بک پر صارفین کا ڈیٹا استعمال کرنے کے کیسز بھی ہو چکے ہیں جبکہ امریکہ کے الیکشن میں امریکیوں کا ڈیٹا روس کی انٹیلی جنس کمپنیوں کو بھی فیس بک نے ہی مہیا کیا تھا۔
لہٰذا اب ٹوئٹر کے حوالے سے بھی کچھ ایسا ہی سامنے آیا ہے۔سوشل میڈیا کی مشہور ویب سائٹ ٹویٹر نے اشتہارات کیلئے صارفین کا ڈیٹا استعمال کرنے پر معافی مانگ لی ہے۔ سماجی رابطے کی ویب سائٹ کا کہنا ہے کہ صارفین کے فون نمبر اور ای میل ایڈریس نادانستہ طور پر استعمال ہوئے ہیں۔ ٹوئٹر پر اکاؤنٹ کی تصدیق کے لیے صارفین اپنا فون نمبر اور ای میل ایڈریس فراہم کرتے ہیں۔
ویب سائٹ کے بیان کے مطابق صارفین کا ڈیٹا مخصوص اہداف کے نظام ذریعے استعمال ہوا ہے۔ٹوئٹر کے مطابق ٹیلرڈ آڈئینس فیچر کے ذریعے ایڈورٹائزر، مارکیٹینگ لسٹ کے مطابق پروڈکٹ صارفین تک پہنچاتا ہے جبکہ پارٹنر آئیڈینس فیچر بھی ٹیلرڈ آڈئینس فیچر کا استعمال کرتے ہیں اور تھرڈ پارٹی کی جانب سے فراہم کیے گئے اشتہارات صارفین تک پہنچاتے ہیں۔
ٹویٹر کا کہنا تھا کہ ہمیں حال ہی میں معلوم ہوا ہے کہ اکاؤنٹ کی سکیورٹی کے لیے فراہم کیے گئے کچھ ای میل ایڈریس اور فون نمبرز کو غیر ارادی طور پر استعمال کیا گیا ہے۔بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ ٹوئٹر کی جانب سے کسی کی ذاتی معلومات کمپنی سے باہر کسی بھی پارٹی یا پارٹنر کے ساتھ شیئر نہیں ہوئے۔خبر رساں ادارے کے مطابق ٹوئٹر کے بیان میں کہا گیا ہے کہ کمپنی معذرت خواہ ہے کہ ایسا ہوا، ہم ایسی غلطی دوبارہ نہ دہرانے کے لیے اقدامات کر رہے ہیں۔

تاریخ اشاعت : جمعرات 10 اکتوبر 2019

Share On Whatsapp