تاجروں کا اسلام آباد میں احتجاجی دھرنا، ریڈ زون جانے والے تمام راستے بند

حساس علاقے میں داخل ہونے سے روکنے پر مظاہرین اور پولیس کے درمیان تصادم، صورتحال کے پیش نظر واٹر کینن جبکہ پولیس کی بھاری نفری بھی طلب

اسلام آباد : تاجروں کا اسلام آباد میں احتجاجی دھرنا، ریڈ زون جانے والے تمام راستے بند، حساس علاقے میں داخل ہونے سے روکنے پر مظاہرین اور پولیس کے درمیان تصادم، صورتحال کے پیش نظر واٹر کینن جبکہ پولیس کی بھاری نفری بھی طلب۔ تفصیلات کے مطابق خیبرپختونخواہ سے تعلق رکھنے والے تاجروں کی جانب سے حکومت اور ایف بی آر کی پالیسیوں کیخلاف احتجاجی دھرنے کا اعلان کیا گیا تھا، جس کے سلسلے میں تاجروں کی بڑی تعداد بدھ کے روز اسلام آباد پہنچ گئی۔
مظاہرین کی جانب سے ایف بی آر دفتر کے سامنے احتجاج کی کوشش کی گئی تاہم پولیس نے انہیں ایمبیسی روڈ پر روک لیا۔ جبکہ ریڈ زون جانے والے راستے بند کرتے ہوئے بھاری نفری تعینات کر دی گئی۔ تاجروں نے ریڈ زون جانے کی کوشش کی تو سیکیورٹی پر مامور پولیس نے انھیں روکنے کی کوشش کی۔ اس موقع پر کشیدگی پیدا ہوئی اور تاجروں اور پولیس اہلکاروں کے درمیان ہاتھا پائی بھی دیکھنے میں آئی۔
جبکہ کشیدہ صورتحال پیدا ہونے کے پیش نظر واٹر کینن اور پولیس کی بھاری نفری کو بھی طلب کر لیا گیا۔ تاجر برادری نے مطالبہ کیا کہ ہمارا دھرنا ایف بی آر دفتر کے سامنے ہوگا تاہم پولیس نے تاجروں کو مزید آگے بڑھنے سے روک دیا۔ تاجروں نے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے فکسڈ ٹیکس سکیم کا جو وعدہ کیا تھا، اسے پورا کیا جائے۔ تاجروں کا کہنا تھا کہ ٹیکس حکام انہیں ہراساں کرتے ہیں، یہ سلسلہ بند کیا جائے۔ جبکہ مطالبات کی منظوری تک احتجاج ختم نہیں ہوگا۔ جب تک چیئرمین ایف بی آر خود آکر مذاکرات نہیں کریں گے تب تک احتجاج جاری رہے گا۔

تاریخ اشاعت : بدھ 9 اکتوبر 2019

Share On Whatsapp