ہوم گرائونڈ میں سری لنکا کی کمزور ٹیم سے شکست پر شائقین کرکٹ قومی ٹیم پر برس پڑے

, چلے ہوئے کارتوسوں کو بار بار آزمانا کہاں کی عقلمندی ہے ،تنخواہ او رمراعات کو میچز میں کارکردگی سے مشروط کیا جائے

لاہور : قومی ٹیم نے کمزور حریف کے خلاف ہوم گرائونڈ میں شکست کھا کر انٹر نیشنل کرکٹ کی بحالی پر خوشی سے نہال شائقین کرکٹ کی خوشیوں پر پانی پھیر دیا ، شائقین کرکٹ نے عمر اکمل اور احمد شہزاد کی شمولیت پر سوال اٹھاتے ہوئے کہا ہے کہ چلے ہوئے کارتوسوں کو بار بار آزمانا کہاں کی عقلمندی ہے ، کھلاڑیوں کو فکس تنخواہ اور مراعات دینے کی بجائے میچز میں کارکردگی سے مشروط کیا جائے۔
کرکٹ کے پرستار راشد محمود نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ دوستیاں نبھانے کی بجائے نوجوان کرکٹرز کو موقع دیا جائے اور انہیں مستقبل کے لئے تیار کیا جائے۔ جس ٹیم نے سری لنکا کی کمزور ٹیم کے خلاف انتہائی ناقص کارکردگی دکھائی ہے اس سے آنے والے دنوں میں آسٹریلیا کے خلاف کیا توقعات وابستہ کی جائیں۔نور الحسن نے کہا کہ کھلاڑیوں کی باڈی لینگوئج سے ایسا لگتا ہی نہیں کہ وہ پروفیشنل کرکٹر زہیں بلکہ ان کا رویہ بالکل ماڈلز کی طرح ہوتا ہے۔
yانہیں فکس بھاری تنخواہیں اور مراعات دینے کی بجائے میچز میںکارکردگی سے مشروط کیا جائے تو ان کے ہوش ٹھکانے آ جائیں گے۔ ایک اور کرکٹ کے پرستار عامر اقبال نے کہا کہ کھلاڑیوں پر کمرشلز پر پابندی عائد کی جائے اور ان کیلئے سرکاری ملازمین کی طرح ہفتے میں آٹھ گھنٹے پریکٹس لازمی قرار دی جائے۔ سری لنکا سے دو میچز میں شکست پر کرکٹ شائقین نے سخت رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ چیف سلیکٹر اور کوچز کی تنخواہیں بھی سیریز جیتنے سے مشروط کی جائیں۔

تاریخ اشاعت : منگل 8 اکتوبر 2019

Share On Whatsapp