Misbah-ul-Haq Made The Wrong Decision That Led To The Defeat Of The National Team
Chief Selector And Head Coach Omar Akmal Fails To Bring Back Ahmed Shehzad

مصباح الحق کا وہ غلط فیصلہ جو قومی ٹیم کی شکست کا باعث بنا

چیف سلیکٹر اور ہیڈ کوچ کا عمر اکمل، احمد شہزاد کو واپس لانے کا تجربہ ناکام

لاہور : قومی ٹیم کے نئے مصباح الحق کا عمر اکمل اور احمد شہزاد کو موقع دینے کا فیصلہ غلط ثابت ہو گیا۔دونوں کھلاڑی ٹی ٹونٹی سکواڈ میں شامل ہونے میں کامیاب تو ہو گئے تاہم سری لنکا کے خلاف دونوںمیچوں میں دونوں کھلاڑیوں میں سے کوئی بھی کارکردگی دکھانے میں ناکام رہا۔عمر اکمل نے بین الاقوامی کرکٹ میں واپس آتے ہی ٹی ٹونٹی فارمیٹ میں سب سے زیادہ 10مرتبہ صفر پر آﺅٹ ہونے کا عالمی ریکارڈ برابر کر دیا،عمر اکمل پہلے ٹی ٹونٹی میں 3سال کے طویل عرصے کے بعد میدان میں اترے اور پہلی ہی گیند پر ایل بی ڈبلیو آﺅٹ ہو گئے،دوسرے میچ میں ٹاپ آرڈر کی ناکامی کے بعد عمر اکمل پر لمبی اننگز کھیلنے کی ذمہ داری آگئی تاہم وہ ایک مرتبہ پھر پہلی گیند پر ایل بی ڈبلیو آﺅٹ ہو گئے۔
دوسری طرف احمد شہزاد بھی متاثر کن کارکردگی نہ دکھاسکے اور پہلے میچ میں نو گیندوں پر چار اور دوسرے میچ میں 13 رنز ہی بنا سکے۔خیال رہے کہ سری لنکا کی نسبتاً کمزور ٹیم کے خلاف ٹی ٹونٹی کرکٹ میں عالمی نمبر ایک ٹیم کی ذلت آمیز شکست پر شائقین کرکٹ نے مایوسی کا اظہار کیا ہے۔حال ہی میں ہیڈ کوچ اور چیف سیلیکٹر کا منصب سنبھالنے والے مصباح الحق کے کچھ فیصلوں پر بھی کڑی تنقید کی جارہی ہے جن میں احمد شہزاد اور عمر اکمل کو کھلانا شامل ہے۔
آئی سی سی رینکنگ میں آٹھویں نمبر کی ٹیم کے ہاتھوں گھر پر سیریز ہارنے کے بعد ہیڈ کوچ کے بیان نے شائقین کو مزید سیخ پا کر دیا۔عمر اکمل اور احمد شہزاد کو کھلانے کے سوال پر ہیڈ کوچ نے کہا کہ دونوں کھلاڑیوں نے ڈومیسٹک اور پی ایس ایل نے پرفارمنس دی تھی۔ 

تاریخ اشاعت : منگل 8 اکتوبر 2019

Share On Whatsapp