بھارت نے پاکستان کے خلاف ایک اور پراپیگنڈہ شروع کر دیا

پاکستان نے ایل او سی کے قریب 30 لانچنگ پیڈ بنا لیے۔ بھارت کا واویلا

نئی دہلی : : بھارت پاکستان کے خلاف جھوٹا پراپیگنڈہ کرنے کا کوئی موقع ہاتھ سے جانے نہیں دیتا اور اس مرتبہ بھی بھارت نے پاکستان کے خلاف نیا پراپیگنڈہ بنا لیا ہے جس کے تحت بھارت واویلا کر رہا ہے کہ پاکستان نے لائن آف کنٹرول کے قریب 30 لانچنگ پیڈز بنا لیے ہیں۔ میڈیا رپورٹ میں بتایا گیا کہ بھارت نے اپنے تازہ ترین پراپیگنڈہ میں کہا کہ پاکستان بھارت میں مجاہدین کو داخل کرنے کے لیے لائن آف کنٹرول کے آس پاس 30 لانچنگ پیڈ بنا چکا ہے۔
بھارتی میڈیا کے مطابق لشکر طیبہ اور جیش محمد کے کارکنان بھارت میں داخل ہونے کی کوششو ں میں لگے ہوئے ہیں۔ بھارتی میڈیا کا مزید کہنا ہے کہ افغان مزاحمت کار بھی ایل او سی کے نزدیک پہنچا دیے گئے ہیں۔ جن کی تعداد 230 سے 280 کے درمیان بتائی جا رہی ہے۔ بھارتی میڈیا نے سیکورٹی ایجنسیوں کے حوالے سے بتایا کہ پاکستانی فوج اور آئی ایس آئی لانچنگ پیڈ کے ذریعے مجاہدین کو بھارت میں داخل کرنے کا منصوبہ بنارہی ہے۔
اس سے قبل بھی بھارت کئی مرتبہ پاکستان کے خلاف پراپیگنڈہ کر چکا ہے۔ حال ہی میں بھارت نے پاکستان کے خلاف دہشتگردی کی ایک اور کہانی تیار کر لی تھی۔ بھارت نے سرکریک میں ممکنہ پاکستانی حملے کی جھوٹ پر مبنی جھوٹی کہانی بنائی اور بھارتی جنرل نے ٹوٹی پھوٹی کشتیوں سے خودساختہ کہانی تیار کر لی۔ بھارتی حکام نے اس پراپیگنڈے کے تحت بھی پاکستان پر الزام تراشی کی تھی اور کہا تھا کہ پاکستان سرکریک ریجن سے حملہ کرنا چاہتا ہے۔
اس حوالے سے بھارتی سدرن کمان کے جنرل نے ٹوٹی پھوٹی کشتیاں ڈھونڈ کر جھوٹ کا ایک پلندا بھی تیار کیا۔ بھارتی سدرن کمان کے سربراہ لیفٹیننٹ جنرل ایس کے سینی نے جھوٹی کہانی کے تانے بانے جوڑتے ہوئے دعویٰ کیا کہ سرکریک ریجن میں ہم نے ٹوٹی پھوٹی کشتیاں تلاش کیں۔ پاکستان ان کشتیوں کے ذریعہ دہشت گردی کرنا چاہتا تھا، ہم سکیورٹی اقدامات اُٹھا رہے ہیں۔ تاہم اب بھارت نے پاکستان کی جانب لائن آف کنٹرول پر 30 لانچنگ پیڈز بنانے کا جھوٹا اور بھونڈا دعویٰ کرکے پراپیگنڈہ شروع کر دیا ہے۔

تاریخ اشاعت : جمعرات 12 ستمبر 2019

Share On Whatsapp