امریکی صدر کا ای سگریٹ سے بڑھتی ہوئی ہلاکتوں پر اظہار تشویش

واشنگٹن : امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے الیکٹرانک سگریٹ سے بڑھتی ہوئی ہلاکتوں پر اظہار تشویش کرتے ہوئے کہا ہے کہ لوگ ای سگریٹ پینے سے مر رہے ہیں جن میں بچے بھی شامل ہیں۔انھوں نے کہا کہ ان کی حکومت جلد الیکٹرانک سگریٹ ختم کرنے جا رہی ہے۔ ذرائع کے مطابق وائٹ ہاؤس میں ایک اجلاس کے دوران امریکہ میں ای سگریٹ سے ہونے والی 6 اموات اور گزشتہ چند مہینوں سے اس سے جڑی پراسرار بیماری پر غور کیا گیا۔
صدر ٹرمپ کا کہنا تھا کہ اٴْنہیں علم ہے کہ ویپنگ ایک بہت بڑا کاروبار بن چکا ہے، لیکن یہ ایک بُری چیز ہے جس سے بہت سے مسائل پیدا ہو رہے ہیں۔اب سکول کے طالب علم بھی اس کی لت میں مبتلا ہوتے جا رہے ہیں۔صدر ٹرمپ کا کہنا تھا کہ ان کی اپنی فیملی میں بھی ویپنگ کے بارے میں سخت تشویش پائی جاتی ہے کیونکہ ان کا اپنا 13 سال کا بچہ ہے، اور ان کی اہلیہ میلانیا ٹرمپ بھی اس بارے میں سخت فکر مند ہیں۔
اجلاس میں وزیر صحت کا کہنا تھا کہ حکومت کی بہترین کاوشوں کے باوجود، بچوں کو اِن مصنوعات تک رسائی مل رہی ہے، جس کی وجہ سے اب وہ ان تمام مصنوعات کو مارکیٹ سے ہٹا رہے ہیں۔فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق، حالیہ برسوں میں بچوں میں ای سگریٹ کا استعمال بڑھتا جا رہا ہے۔ اس وقت مڈل اور ہائی سکول کے تقریباً 36 لاکھ طلبا اس لت کا شکار ہیں۔

تاریخ اشاعت : جمعرات 12 ستمبر 2019

Share On Whatsapp