پاکستانی کی دعوت قبول کرنے پر معروف بھارتی گلوکار کے خلاف کاروائی

امریکا میں ایک پاکستانی شو پروموٹر کی دعوت قبول کرنے پر بھارتی گلوکار و اداکار دلجیت دو سانجھ کا ویزا منسوخ کرنے کے لیے وزارت خارجہ کو خط لکھ دیا گیا

نئی دہلی : : امریکا میں ایک پاکستانی شو پروموٹر کی دعوت قبول کرنے پر بھارتی گلوکار و اداکار دلجیت دو سانجھ کا ویزا منسوخ کرنے کے لیے خط لکھ دیا۔اس حوالے سے میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ فیڈریشن آف ویسٹرن انڈیا سائن ایمپلائز نے بھارتی وزارت خارجہ کو لکھا ہے کہ بھارتی گلوکار و اداکار دلجیت دوسانجھ کا ویزا منسوخ کیا جائے۔جنہوں نے 21 ستمبر کو امریکا میں ہونے والے پروگرام کے لیے ایک پاکستانای ریحان صدیقی کی دعوت قبول کی ہے۔
بھارتی وزارت خارجہ کو فیڈریشن کی جانب سے لکھے گئے خط میں مزید کہا گیا کہ امریکا میں پروگراموں کو پروموٹ کرنے والے پاکستانی ریحام صدیقی نے پنجابی گلوکار دلجیت کو امریکا آنے کی دعوت دی تھی۔جو انہوں نے قبول کر لی۔اس پر دلجیت کا ویزا منسوخ کیا جائے اور انہیں سخت وارننگ دی جائے کہ وہ آئندہ ایسا نہ کریں۔خیال رہے اس سے قبل بھارتی فلم تنظیم فیڈریشن آف ویسٹرن انڈیا سنی ایمپلائز (ایف ڈبلیو آئی سی ای) نے رواں ماہ 15 اگست کو بھارتی بھنگڑا گلوکار میکا سنگھ پر پاکستان میں پرفارمنس کرنے پر بائیکاٹ کا اعلان کیا تھا۔
۔تنظیم کی جانب سے بائیکاٹ کے اعلان کے بعد میکا سنگھ نے تین دن قبل ہی عوام سے پاکستان میں پرفارمنس کرنے پر معافی مانگتے ہوئے کہا تھا کہ ان کا بائیکاٹ نہ کیا جائے، ان سے غلطی ہوئی۔میکا سنگھ نے عوام اور تنظیم سے معافی مانگتے ہوئے پاکستان میں پرفارمنس کرنے پر تنظیم کو 20 اگست کو اپنا مؤقف دینے کے لیے وقت مانگا تھا۔ تنظیم اور میکا سنگھ کے درمیان ملاقات اور مذاکرات ہونے کے بعد اب تنظیم نے گلوکار پر پابندی کا اعلان واپس لے لیا تھا۔
میکا سنگھ نے اپنے ٹوئٹر پر تنظیم سے ملاقات کے بعد تنظیم کی جانب سے جاری کیے گئے اعلامیے کی کاپی شیئر کرتے ہوئے اعلان کیا کہ فیڈریشن آف ویسٹرن انڈیا سنی ایمپلائز نے ان پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ واپس لے لیا۔میکا سنگھ نے عوام اور تنظیم کا شکریہ ادا کرتے ہوئے لکھا کہ وہ پابندی کا اعلان واپس لیے جانے پر تنظیم کے مشکور ہیں۔ تنظیم کی جاب سے جاری اعلامیے میں کہا گیا کہ میکا سنگھ نے تنظیم کے سامنے اپنا مؤقف پیش کیا، جس میں انہوں نے بتایا کہ انہوں نے پاکستان میں پرفارمنس کا معاہدہ دونوں ممالک میں حالیہ کشیدگی شروع ہونے سے قبل کر رکھا تھا۔
بیان کے مطابق میکا سنگھ نے بتایا کہ حالات کشیدہ ہونے کے دوران ہی انہیں پاکستان کا ویزا ملا جس وجہ سے وہ وہاں معاہدے کے تحت پرفارمنس کرنے چلے گئے۔ بیان میں بتایا گیا کہ میکا سنگھ نے پاکستان میں پرفارمنس کرنے کو اپنی غلطی قرار دیا اور وعدہ کیا کہ وہ آئندہ ایسی غلطی نہیں دہرائیں گے۔فیڈریشن آف ویسٹرن انڈیا سنی ایمپلائز کے بیان میں بتایا گیا کہ میکا سنگھ کی جانب سے معافی مانگے جانے اور ان کی جانب سے ایسی غطلی دوبارہ نہ کرنے کی یقین دہانی کرائے جانے کے بعد تنظیم نے ان پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ واپس لے لیا۔

تاریخ اشاعت : بدھ 11 ستمبر 2019

Share On Whatsapp