روس کی ایٹمی ہتھیار بنانے والی لیبارٹری میں دھماکا

دھماکا روسی بحریہ کی میزائل اور راکٹ بنانے والی لیبارٹری میں ہوا، شہریوں نے آئیوڈین خریدنا شروع کر دی

ماسکو : روس کی ایٹمی ہتھیار بنانے والی لیبارٹری میں دھماکا، دھماکا روسی بحریہ کی میزائل اور راکٹ بنانے والی لیبارٹری میں ہوا۔ دھماکے کے نتیجے میں 5 افراد ہلاک اور تین جھلس کر زخمی ہوگئے ہیں۔ شہریوں نے تابکاری سے بچنے کے لیے آئیوڈین خریدنا شروع کر دی ہے۔ غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق روسی بحریہ کے لیے میزائل اور راکٹ بنانے والی ’’آرکٹک نیول رینج‘‘ نامی لیبارٹری میں انجن کی تیاری کے دوران زور دار دھماکا ہوا۔
میڈیا کے مطابق دھماکے کے بعد بڑے پیمانے پر آگ لگ گئی جس کے نتیجے میں متعدد افراد جھلس گئے جن میں سے تین کی حالت تشویشناک ہے۔ بتایا گیا ہے کہ انجن تیار کرنے والے پانچوں انجیئنرز موقع پر ہی دم توڑ گئے۔ زخمیوں کو اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے جہاں ڈاکٹرز نے تین کی حالت بہت زیادہ تشویشناک بتائی ہے۔ جوہری کمپنی کے ترجمان کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ انجینئرز اور تکنیکی ٹیم کے اہلکار ’آئسو ٹاپ پاور سورس‘ پر کام کر رہے تھے کہ اسی دوران دھماکا ہو گیا۔
انہوں نے مزید بتایا کہ دھماکے کے بعد صورتحال قابو میں کرلی گئی ہے اور لیبارٹری میں لگی آگ کو بجھا دیا گیا ہے اور اب خطرے کی کوئی بات نہیں ہے۔ ڈاکٹرز کے مطابق جن زخمیوں کو اسپتال لایا گیا ہے انہوں نے نیوکلیئر اور کیمیکل مواد سے بچاؤ والے لباس پہنے ہوئے تھے جس کی وجہ سے اُن کو زیادہ نقصان نہیں پہنچا۔ دوسری جانب شہریوں نے تابکاری خدشات کے پیش نظر آئیوڈین کی خریداری شروع کردی ہے۔

تاریخ اشاعت : ہفتہ 10 اگست 2019

Share On Whatsapp