اسد قیصر کا ایرانی سپیکر کو ٹیلیفون ، کشمیر کی صورتحال پرتبادلہ خیال

, مشکل اور مظلومیت کی اس گھڑی میں ایران کشمیریوں کو تنہا نہیں چھوڑے گا، ایران

اسلام آباد : ایران نے کہا ہے کہ مشکل اور مظلومیت کی اس گھڑی میں ایران کشمیریوں کو تنہا نہیں چھوڑے گا۔کشمیر کی بگڑتی صورتحال پر اسپیکر اسد قیصر نے دوسرے روز بھی دوست ممالک کی پارلیمان کے سربراہوں سے ٹیلیفونک رابطے کئے ۔ انہوںنے ایران کی مجلس اسلامی کے سربراہ ڈاکٹر علی لاریجانی سے ٹیلیفونک رابطہ کیا اور کہاکہ کشمیر کے مسئلے کو آئندہ ہونے والی اسپیکر کانفرنس کے ایجنڈے میں رکھا جائے۔
انہوںنے بھارت کی جانب سے کشمیریوں پر ڈھائے جانے والے مظالم سے آگاہ کیا،بھارتی آئین میں یکطرفہ ترمیم کے ذریعے کشمیر کی خصوصی حیثیت تبدیل کرنے کے بہیمانہ اقدام سے آگاہ کیا۔اسد قیصر نے کہاکہ انڈیا نے کشمیر میں ظلم و ستم کا بازار گرم کر رکھا ہے،کشمیر میں لاکھوں بیگناھوں کو قتل کیا گیا۔ اسد قیصر نے کہاکہ پیلٹ گنز کے ذریعے نوجوانوں کی بینائی چھینی گئی ہے۔
انہوںنے کہاکہ بھارتی مظالم آزادی کشمیرکی تحریک کو سرد نہیں کر سکے۔ انہوںنے کہاکہ ایران اور کشمیر کے صدیوں پر محیط لسانی، ثقافتی اور مذہبی روابط ہیں۔ ایرانی قیادت نے ہمیشہ کشمیریوں کے حق خودارادیت کی حمایت کی۔انہوںنے کہاکہ توقع ہے ایران عالمی سطح پر بھرپور کردار ادا کرے گا۔ ایرانی سپیکر علی لاریجانی نے کہاکہ پاکستان ایران کا عزیز برادر ملک ہے۔
انہوںنے کہاکہ مشکل اور مظلومیت کی اس گھڑی میں ایران کشمیریوں کو تنہا نہیں چھوڑے گا۔ انہوںنے کہاکہ ایران کشمیر کے معاملے پر کڑی نگاہ رکھے ہوئے ہے۔انہوںنے کہاکہ مسئلہ کشمیر کا حل فوجی نہیں بلکہ اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق ہونا چایئے۔انہوںنے کہاکہ آیت اللہ خامینائی کا کشمیریوں کے حق خودارادیت سے متعلق واضح موقف رہا ہے۔انہوںنے کہاکہ ایران اس حوالے سے کسی بھی قسم کی مصالحتی کردار کے لیئے تیار ہے۔ دونوں رہنماؤں نے عالمی فورموں پر مشترکہ لائحہ عمل اپنانے پر اتفاق کیا ۔

تاریخ اشاعت : ہفتہ 10 اگست 2019

Share On Whatsapp