حوثی ملیشیا کا ایک بار پھر سعودی سرزمین پر ڈرون حملہ

ڈرون حملہ میں سعودی عرب کے شہر ابہا کو نشانہ بنانے کی کوشش کی گئی ، تاہم سعودی افواج نے حملہ ناکام بنا دیا

جدہ : یمن کی حوثی ملیشیا کی جانب سے گزشتہ رات ایک بار پھر سعودی مملکت کو ڈرون طیارے سے نشانہ بنایا گیا۔ تاہم ڈرون اپنے نشانے پر پہنچنے میں کامیاب نہ ہو سکا۔ عرب اتحاد کی فورسز نے اس ڈرون کو فضا میں ہی تباہ کر کے مار گرایا۔ یمن کے لیے عرب اتحاد کی فورسز کے ترجمان کرنل تُرکی المالکی نے اس بارے میں بتایا کہ ایران کی حمایت یافتہ حوثی ملیشیا نے جمعرات کی شب سعودی عرب کے شہر ابہا کی جانب ڈرون بھیجا ۔
یہ ڈرون طیارہ حوثیوں کے زیر انتظام یمنی علاقے صنعاء سے داغا گیا تھا، مگر مستعد سعودی فضائی فورسز نے اسے اپنے ہدف پر پہنچنے سے پہلے ہی فضا میں تباہ کر دیا۔ کرنل المالکی نے اپنے بیان میں کہا کہ حوثی ملیشیا کی جانب سے ڈرون طیارے بھیجے جانے کی تمام کوششوں کا انجام ناکامی ہے۔ اتحادی فورسز شہریوں کی حفاظت کے لیے ان طیاروں کے ساتھ بہترین انداز سے نمٹ رہی ہے۔
بار بار ڈرون طیارے بھیجے جانے کی کوشش اس بات کو ظاہر کرتی ہے کہ یمن میں حوثی ملیشیا کتنی مایوسی کا شکار ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اتحاد کی مشترکہ فورسز کی کمان اس دہشت گرد ملیشیا کے خلاف منہ توڑ جوابی اقدامات پر عمل درآمد جاری رکھے گی تا کہ بین الاقوامی انسانی قوانین کی روشنی میں ملیشیا کی اس صلاحیت کو تباہ کیا جا سکے۔ واضح رہے کہ گزشتہ دو مہینوں کے دوران حوثی ملیشیا کی جانب سے متعدد بار سعودی سرزمین پر واقع سول و سرکاری تنصیبات کو نشانہ بنانے کی کوشش کی گئی۔ کچھ مقامات پر ڈرون حملوں کے نتیجے میں بہت سے افراد زخمی بھی ہو چکے ہیں۔

تاریخ اشاعت : جمعہ 9 اگست 2019

Share On Whatsapp