ہما قریشی پاکستان چلی جائیں ،بھارتی عوام کا تعصبانہ عمل

کشمیر یوں کی حمایت کیوں کی؟ ہما قریشی پاکستان سے کمیشن لیتی ہے،بھارتی عوام

لاہور ۔ :   بھارت میں جس قدر تعصب پایا جاتا ہے شاید ہی دنیا کے کسی ملک میں پایا جاتا ہو۔ذرا ذرا سی بات پر چاقو تلوار اور پتا نہیں کیاکچھ نکال کر لے آتے ہیں اور اگر سوشل میڈیاپر بھی کسی پر تنقید کرنی ہو یا دھمکی دینی ہو تو ان کے لفظوںمیں ایسے نشتر ہوتے ہیں کہ لگتا ہے ہندوﺅں کے ڈی این اے میں تعصب موجود ہے جو کبھی جا ہی نہیں سکتا۔موجودہ کشمیر کے حالات پر اگر کوئی انڈین کشمیرییوں کے حق میں بولنے لگتا ہے تو اسے بھی مارنے پر تل آتے ہیں۔
کچھ ایسا ہی بھارتی انتہا پسندوں نے بالی وڈ ایکٹریس ہما قریشی کے ساتھ بھی کیاہے۔بھارت کی طرف سے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم ہونے کے بعد مسلمانوں کیخلاف معتصبانہ پالیسیاں سامنے آ رہی ہیں۔ بالی وڈ اداکارہ ہما قریشی کی طرف سے آرٹیکل 35اے اور 371 پر رد عمل دینے پر بھارتیوں نے ان پر تنقید کے نشتر چلا دیئے اور کہا کہ اداکارہ پاکستان چلی جائیں۔
سوشل میڈیا پر کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کیے جانے پر بالی ووڈ اداکاراوئوں کی طرف سے رد عمل سامنے آ رہے ہیں، دیا مرزا، زارا وسیم اور دیگر فنکاروں کی طرح اداکارہ ہما قریشی اور ثاقب سلیم نے بھی خاموشی توڑ دی۔مقبوضہ کشمیر میں کرفیو، سیاسی قیادت کو نظر بند اور بھاری مقدار میں فوج تعینات کیے جانے پر خدشات کا اظہار کیا۔اداکارہ ہما قریشی نے ٹویٹ میں لکھا کہ مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنا سنگین مسئلہ ہے اور اس معاملے پر رائے دینے والے افراد کو سنجیدگی کا مظاہرہ کرنا چاہیے کسی کو کچھ سوچے سمجھے بغیر دوسرے کی سکیورٹی کے لیے مسائل پیدا نہیں کرنے چاہئیں۔
اداکارہ نے مسئلے پر بے جا بات کرنے والے افراد سے درخواست کی کہ وہاں پر لوگوں کے ساتھ ہونے والے ظلم سے باخبر رہیں، اس لیے بات کرنے سے قبل سنجیدگی کا مظاہرہ کریں۔ہما قریشی کی جانب سے ٹویٹ کیے جانے کے بعد بھارتی اپنی معتصبانہ پالیسیوں پر اتر آئے اور اداکارہ پر شدید تنقید کا نشانہ بنایا اور ہما پر پاکستان سے کمیشن لینے کا الزام لگا دیا۔اداکارہ کی طرف سے پیش کی گئی تجویز پر بہت سے لوگ ان پر تنقید کر رہے ہیں تاہم کچھ لوگ ان کی تجویز حمایت کر رہے ہیں۔ تنقید کرنے والوں کو حامی کہہ رہے ہیں کہ اداکارہ کو نہیں بلکہ آپ کو پاکستان چلے جانا چاہئیں۔

تاریخ اشاعت : جمعہ 9 اگست 2019

Share On Whatsapp