Belgian Bar Takes Patrons’ Shoes As Collateral To Prevent Beer Glass Theft

بیلجین بار نے اپنے گلاس چوری ہونے سے بچانے کے لیے گاہکوں کے جوتے بطور ضمانت رکھنا شروع کر دئیے

بیلجیم کے ایک بار میں گلاسوں کی چوری اتنی زیادہ بڑھی کہ اب ایک  بار کے مالک نے انوکھے طریقے سے اس چوری کو روکنے کی کوشش کی ہے۔گلاسوں کو چوری ہونے سے بچانے کے  لیے گینت  میں واقع ایک بار نے  گاہکوں سے ضمانت کے طور پر اُن کا ایک جوتا طلب کرنا شروع کر دیا ہے۔

بیلجیم میں آنے والے سیاح اس ملک  کی مقبول بیئر ضرور پیتے ہیں۔ وقت کے ساتھ ساتھ سیاحوں میں ایک عادت پختہ ہو گئی ہے  کہ وہ بیئر پینے کے بعد یادگار کے طور پر بیئر کا گلاس بھی ساتھ لےجاتے ہیں۔


بروج میں واقع دی بیئر وال کے مالک فلپ مائس کا کہنا ہے کہ صرف ایک سال کے عرصے میں اُن کے 4 ہزار گلاس چوری ہوئے، یہ تمام گلاس کافی قیمتی تھے۔ان گلاسوں میں سے بہت سوں پر ہاتھ سے ڈیزائننگ کی گئی تھی۔  انہیں صرف اس بیئر بار کےلیے بنایا گیا تھا۔بیئر کے ایک گلاس کی قیمت 50 یورو یا 55 ڈالر تک ہوتی ہے۔ایسے میں ہزاروں گلاسوں کا چوری ہونا ایک بہت بڑا نقصان ہے۔
اسی وجہ سے فلپ نے دوسری بارز کے مالکان سے ساتھ مل کی حفاظتی اقدامات کیے ہیں۔
پچھلے سال فلپ نے 5000 ڈالر خرچ کر کے ایک الارم سسٹم متعارف کرایا ۔ کسی بھی سیاح کے گلاس کے ساتھ باہر جانے پر یہ الارم سسٹم مطلع کرتا ہے ۔ اس الارم سسٹم کی وجہ سے 80 فیصد افراد گلاس چوری کرتے ہوئے پکڑے گئے جبکہ 20 فیصد افراد ایسے تھے، جو کسی نہ کسی طرح گلاس باہر لےہی  جاتے  تھے۔

دوسرے لوگوں نے کچھ سستے حفاظتی اقدامات کیے۔ گینت کی ایک بار کے مالک  گیریٹ نے  بیئر پینے والوں سے ضمانت کے طور پر ایک جوتا طلب کرنا شروع کر دیا۔یہ جوتے ایک خصوصی ٹوکری میں رکھ کر چھت سے لٹکائے جاتے ہیں۔جوتوں کے مالک کی واپسی پر انہیں ان کے جوتے واپس کر دئیے جاتے ہیں۔دلچسپ بات یہ ہے کہ یہ طریقہ بھی چوروں کو روکنے میں ناکام رہا ہے کیونکہ بعض سیاح گلاس کو بطور یادگار ساتھ لے جانے کےلیے ننگے پاؤں ہی باہر چلے جاتےہیں۔

تاریخ اشاعت : جمعہ 26 جولائی 2019

Share On Whatsapp
سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں