امریکا نے ایف۔ 35 نہ دیئے توکسی دوسرے ملک سے لڑاکا طیارے خرید لیں گے، ترک صدر

استنبول : ترکی کے صدر رجب طیب اردوان نے کہا ہے کہ امریکا نے ایف۔ 35 لڑاکا طیارے فراہم نہ کئے تو ان کا ملک کسی دوسرے ملک سے لڑاکا طیارے خرید لے گا۔برطانوی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق ترک صدر نے کہا کہ ترکی کو جنگی طیاروں کی تیاری کے پروگرام سے علیحدہ کرنے کے بعد یہ نہ سمجھا جائے کے کوئی ملک ترکی کو اپنی دفاعی ضروریات پوری کرنے سے روک لے گا۔
امریکی انتظامیہ نے گذشتہ ہفتے ترکی کوایف۔35 طیاروںکے پروگرام سے علیحدہ کرنے کا اعلان کیا تھا جس کی وجہ ترکی کی روس سے میزایل ڈیفنس سسٹم ایس۔ 400 کی خریداری بتائی گئی تھی۔امریکی قانون کے مطابق ترکی پر پابندیوں کا اعلان امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے ہونا ابھی باقی ہے۔ترک صدر نے امریکا سے تعلقات کشیدہ ہونے کی تصدیق کی اور امید ظاہر کی ہے کے امریکی حکام پابندیوں سے متعلق مناسب رویہ اختیار کریں گے۔
دریں اثنا ترک صدر رجب طیب اردوان نے کہا ہے کہ روس سے خریدا گیا ایس۔ 400 میزائل کی تنصیب آئندہ سال اپریل تک مکمل ہو جائے گی۔ فرانسیسی خبر رساں ادارے کے مطابق انہوں نے اپنی پارٹی جسٹس اینڈ ڈویلپمنٹ کی ایک تقریب کے دوران بتایا کہ ایف۔35 لڑاکا طیاروں کے پراجیکٹ سے علیحدہ کرنے سمیت کوئی بھی دھمکی ترکی کو سلامتی کے حوالے سے اپنی ترجیحات کو یقینی بنانے سے نہیں روک سکتی۔ انہوں نے اس امید کا اظہار کیا کہ امریکا ایس۔ 400 میزائل سسٹم کے حوالے سے سمجھداری کا مظاہرہ کرے گا۔

تاریخ اشاعت : جمعہ 26 جولائی 2019

Share On Whatsapp